Tuesday , July 17 2018
Home / Top Stories / معاشی ترقی میں ہندوستان کو چھٹواں مقام

معاشی ترقی میں ہندوستان کو چھٹواں مقام

فرانس کو پیچھے کردیا، امریکہ ہنوز دنیا کا سب سے بڑا معاشی ملک : ورلڈ بینک

پیرس ۔ 11 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان دنیا کی سب سے بڑی چھٹویں معاشی طاقت بن گیا ہے۔ اس نے فرانس کو پیچھے چھوڑ دیا۔ فرانس کا مقام ساتویں نمبر پر ہے۔ عالمی بینک کے 2017ء کیلئے تیار کردہ رپورٹ میں ہندوستان کی اندرون ملک مجموعی پیداوار 2.597 ٹریلین ڈالر بتائی گئی ہے جبکہ فرانس کی سالانہ مجموعی پیداوار 2.582 ٹریلین ڈالر ہے۔ ہندوستان کی معاشی ترقی ماضی میں کئی نشیب و فراز کے بعد جولائی 2017ء سے مزید مضبوط ہوئی ہے۔ ہندوستان کی جملہ آبادی تقریباً 1.34 بلین ہے اور یہ دنیا کی سب سے بڑی کثیر آبادی والا ملک بن رہا ہے جبکہ فرانس کی آبادی 67 ملین ہے۔ اس مطلب یہ ہوا کہ ہندوستان کی جی ڈی پی فی کس فرانس کے مقابل 20 گنا زیادہ ہے۔ عالمی بینک کے اعداد و شمار کے مطابق ہندوستان میں گذشتہ سال کی بہ نسبت اس سال بہتر ترقی کی ہے۔ مینوفیکچرنگ اور کنزیومر پر ہونے والے مصارف میں گذشتہ سال ہندوستانی معیشت کو اونچا اٹھایا تھا۔ نوٹ بندی اور گڈس اینڈ سرویس ٹیکس پر عمل آوری کے اثرات کے بعد ہندوستان کی معیشت میں بہتری آئی ہے۔ ایک دہے کے اندر ہندوستان نے اپنی جی ڈی پی کو دگنا کردیا ہے اور وہ توقع ہیکہ ایشیائی خطہ میں ایک اہم معاشی طاقتور ملک بن کر ابھرے گا جبکہ اس کے سامنے چین سست رفتاری کا شکار ہورہا ہے۔ بین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) کے مطابق ہندوستان میں ترقی کی شرح اس سال 7.4 فیصد درج کی گئی۔ 2019ء میں یہ شرح 7.8 فیصد ہونے کی توقع ہے۔ گھریلو مصارف میں زبردست چھلانگ دکھائی دے رہی ہے اور ٹیکس اصلاحات کے باعث بھی معیشت کو استحکام ملا ہے۔ لندن کے ادارہ اکنامکس اینڈ بزنس ریسرچ سنٹر نے گذشتہ سال کے اواخر میں کہا تھا کہ ہندوستان اس سال برطانیہ، فرانس دونوں پیچھے چھوڑ کر ان پر سبقت لے جائے گا اور 2032ء تک یہ دنیا کا تیسرا سب سے بڑا معاشی ملک بن جائے گا۔ امریکہ ہنوز دنیا کا سب سے بڑا طاقتور معاشی ملک ہونے کا موقف برقرار رکھا ہے۔ اس کے بعد چین، جاپان اور جرمنی شامل ہیں۔

TOPPOPULARRECENT