Wednesday , December 19 2018

معصوم ستانک زئی وزیردفاع افغانستان

کابل ۔ 21 مئی (سیاست ڈاٹ کام) افغانستان کے صدر اشرف غنی نے آج وزارت دفاع کی ذمہ داری سنبھالنے اپنے امیدوار کو نامزد کردیا۔ وہ کئی ماہ کی داخلی رسہ کشی کے بعد اپنی کابینہ کی تشکیل کا عمل مکمل کرلینا چاہتے ہیں۔ یہ فیصلہ ایسے وقت ہوا ہے جب طالبان کی جانب سے حملوں میں شدت پیدا کئے جانے کے اندیشے ظاہر کئے جارہے ہیں۔ صدر اشرف غنی نے محمد معصو

کابل ۔ 21 مئی (سیاست ڈاٹ کام) افغانستان کے صدر اشرف غنی نے آج وزارت دفاع کی ذمہ داری سنبھالنے اپنے امیدوار کو نامزد کردیا۔ وہ کئی ماہ کی داخلی رسہ کشی کے بعد اپنی کابینہ کی تشکیل کا عمل مکمل کرلینا چاہتے ہیں۔ یہ فیصلہ ایسے وقت ہوا ہے جب طالبان کی جانب سے حملوں میں شدت پیدا کئے جانے کے اندیشے ظاہر کئے جارہے ہیں۔ صدر اشرف غنی نے محمد معصوم ستانک زئی کو ہائی پیس کونسل کا سکریٹری نامزد کیا ہے جس کے نتیجہ میں وہ وزارت داخلہ کے ذمہ دار ہوجائیں گے۔ یہ عہدہ کئی ماہ سے تقرر طلب تھا کیونکہ اشرف غنی اور ان کے چیف ایگزیکیٹیو آفیسر عبداللہ عبداللہ کے مابین اختلافات پیدا ہوگئے تھے۔ اشرف غنی نے کابل میں بیرونی مندوبین کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ معصوم ستانک زئی ہمارے نئے وزیرخارجہ ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ وہ دوسرے اہم ترین عہدوں بشمول صوبائی گورنر کا تقرر عمل میں لانے مسلسل کوشش کررہے ہیں۔

ستانک زئی اس سے قبل سابق صدر حامد کرزئی کے مشیر کی حیثیت سے کام کرچکے ہیں۔ اب ان کے تقرر کو پارلیمنٹ کی منظوری ملنی ضروری ہے۔ اشرف غنی نے اب تک اپنی کابینہ کے 24 وزراء کا تقرر کردیا ہے حالانکہ گذشتہ سال ستمبر میں انہوں نے اقتدار سنبھالا تھا لیکن داخلی اختلافات اور رسہ کشی کی وجہ سے اہم عہدوں پر تقررات نہیں کئے جاسکے۔ افغان عوام میں بھی اشرف غنی اور عبداللہ عبداللہ کے مابین اختلافات کی وجہ سے ناراضگی کی لہر پیدا ہوگئی تھی۔ عوام اس اہم عہدہ پر جلد تقرر کے خواہاں تھے تاکہ طالبان کے امکانی حملوں سے نمٹنے کی تیاری کی جاسکے۔ اشرف غنی اور عبداللہ عبداللہ کے مابین اپنی پسند سے امیدوار کے انتخاب پر اختلافات میں شدت اختیار کرلی تھی جس کے نتیجہ میں حالیہ عرصہ میں سیاسی خلاء جیسی کیفیت پیدا ہوگئی تھی۔ وزیرداخلہ کے تقرر میں تاخیر سے ملک میں عدم استحکام کے اندیشہ بھی پیدا ہوگئے تھے جبکہ طالبان کے خلاف مسلسل 13 سال لڑائی کے بعد ناٹو کی افواج صف اول سے دستبردار ہوگئی تھی۔

TOPPOPULARRECENT