Saturday , November 25 2017
Home / دنیا / مغربی انڈونیشیاء میں آتش فشاں پہاڑ پھٹ پڑا ‘ 7افراد ہلاک

مغربی انڈونیشیاء میں آتش فشاں پہاڑ پھٹ پڑا ‘ 7افراد ہلاک

جکارتا۔22مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) مغربی انڈونیشیاء میں آتش فشاں پہاڑ پھٹ پڑنے کے بعد بچاؤ کارکنوں نے مزید نعشیں برآمد کرلیں جس کے نتیجہ میں ہلاکتوں کی تعداد 7ہوگئی ۔ شمالی سماترا صوبہ میں آتش فشاں پہاڑ سے راکھ کا اخراج ہفتہ کے دن شروع ہوا تھا ‘آسمان میں تین کلومیٹر بلندی تک راکھ کا فوارہ چھوٹ رہا تھا ۔ قومی آفات سماوی انتظامیہ محکمہ کے ترجمان سوٹوپو پرووہنگروہو نے کہا کہ یہ راکھ پہاڑ کی ڈھلان سے پھسلتی ہوئی مغرب کی سمت 4.5کلومیٹر کے فاصلہ پر دریا میں شامل ہونے لگی ۔ آتش فشاں پہاڑ گذشتہ 400سال سے خوابدہ تھا لیکن 2010ء میں یہ دوبارہ سرگرم ہوگیا تھا ۔ دو افراد ہلاک ہوگئے تھے ۔ 2014میں اس کے پھٹ پڑنے سے 16افراد ہلاک ہوئے تھے ۔ کل آتش فشاں پھٹ پڑنے سے ہلاک ہونے والے تمام افراد دیہات گمبیر میں کھیتوںمیں کام کرتے تھے جو پہاڑ کی ڈھلان سے چارکلومیٹر کے فاصلہ پر خطرناک علاقہ میں شامل ہیں ۔ویڈیو جھلکیوں میں کھیت کے مردہ جانوروں کو گرد میں اٹے ہوئے دکھایا گیا ہے ۔کوہ سنابنگ 120سے زیادہ سرگرم آتش فشاں پہاڑوں میں سے ایک ہے جو انڈونیشیاء میں واقع ہیں ۔ یہ علاقہ زلزلوں کے اعتبار سے بھی مخدوش علاقہ سمجھا جاتا ہے ۔ بحرالکاہل کے ’’ آتشی حلقہ ‘‘ میں واقع ہے ۔ یہ ایک آتش فشاں پہاڑوں کی قوس ہے اور خطرہ کے خطوط بحرالکاہل کے کاز کو گھیرے ہوئے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT