Sunday , July 22 2018
Home / Top Stories / مغربی بنگال جل رہا ہے اور ممتابنرجی دہلی میں سیاست کررہی ہیں: بی جے پی

مغربی بنگال جل رہا ہے اور ممتابنرجی دہلی میں سیاست کررہی ہیں: بی جے پی

نئی دہلی ۔ 28 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی نے آج ترنمول کانگریس کی صدر و چیف منسٹر مغربی بنگال ممتابنرجی پر رام نومی کے جلوس کے دوران مغربی بنگال میں پرتشدد واقعات پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ممتابنرجی کی ریاست ’’جل رہی ہے‘‘ اور وہ ’’نئی دہلی میں سیاست کررہی ہیں‘‘۔ رام نومی کے پرامن جلوس پر ترنمول کانگریس کے ٹھگوں نے حملہ کیا تھا۔ بی جے پی کے سینئر قائد پرکاش جاوڈیکر نے ایک پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ یہ ایسا ہی ہے جیسے کہ روم جلتے وقت نیرو بانسری بجارہا تھا۔ انہوں نے مبینہ طور پر تشدد کے واقعات کی تصویروں کی نمائش کی۔ ترنمول کانگریس سے متعلق لوگوں کو نہ صرف بے قصور لارڈ رام کے بھکتوں کو حملوں کا نشانہ بنایا۔ یہی نہیں انہوں نے پولیس کے ارکان عملہ پر بھی حملہ کیا۔ انہوں نے ڈی ایس پی رتبہ کے ایک عہدیدار کی تصویر بھی دکھائی جس میں انہیں تشدد کے دوران زخمی حالت میں دکھایا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مغربی بنگال حکومت اس بارے میں کچھ بھی نہیں کررہی ہے حالانکہ اتنا زیادہ تشدد ہوچکا ہے۔ مرکزی وزیر برائے فروغ انسانی وسائل جاودیکر نے ممتابنرجی پر ریاست کے بارے میں بے حس ہونے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ عوام نے انہیں اقتدار بخشا ہے لیکن وہ ان کی توہین کررہی ہیں۔ چیف منسٹر مغربی بنگال سیاست کرنے کیلئے آزاد ہیں لیکن بی جے پی ان کا جواب دینے کے قابل ہے۔ کسی کو بھی ریاست کی قیمت پر سیاست نہیں کرنی چاہئے بلکہ اپنے دستوری فرائض انجام دینے چاہئیں۔ سابق ترنمول کانگریس مکل رائے جو گذشتہ سال بی جے پی میں شامل ہوچکے ہیں، ممتابنرجی کو ریاست کی نظم و ضبط کی صورتحال کے سلسلہ میں تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے دعویٰ کیا کہ وہ وزیراعظم بننے کی آرزو رکھتی ہیں لیکن ریاستی چیف منسٹر کی حیثیت سے ان کے کیا فرائض ہیں، بھول گئی ہیں۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ ریاست کی زیرسرپرستی دہشت گردی جاری ہے اور مغربی بنگال کے عوام امن اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی چاہتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT