Wednesday , December 13 2017
Home / ہندوستان / مغربی بنگال میں مابعد انتخابات تشدد : سی پی ایم کے دو ورکرس ہلاک

مغربی بنگال میں مابعد انتخابات تشدد : سی پی ایم کے دو ورکرس ہلاک

کولکتہ 22 اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) مغربی بنگال کے بردوان ضلع میں سیاسی حریفوں کے مابین مابعد انتخابی تشدد میں سی پی ایم کے دو ورکرس ہلاک ہوگئے ۔ کہا گیا ہے کہ ترنمول کانگریس کے ورکرس نے یہ حملہ کیا تھا ۔ اپوزیشن سی پی ایم اور کانگریس نے یہ ادعا کیا کہ یہ ہلاکتیں درا صل برسر اقتدار ترنمول کانگریس کی انتخابی شکست میں اندیشوں کی وجہ سے مایوسی کا نتیجہ ہے ۔ ان جماعتوں کا ادعا ہے کہ انتخابات میں ترنمول کانگریس کو شکست کا سامنا کرنا پڑیگا ۔ ترنمول کانگریس نے تاہم ان الزامات کی تردید کی ہے اور کہا کہ یہ ہلاکتیں در اصل کانگریس اور سی پی ایم کیڈر کے مابین اختلافات کا نتیجہ ہیں۔ سپرنٹنڈنٹ پولیس بردوان گورب شرما نے کہا کہ سی پی ایم کے ایک پولنگ ایجنٹ 56 سالہ شیخ فضل حق اور دکھی رام دل کل رات آٹھ بجے اپنے گھروں کو لوٹ رہے تھے کہ ان پر مسلح افراد نے لاٹھیوں سے حملہ کردیا جس کے نتیجہ میں وہ زخمی ہوگئے تھے ۔ انہیں بردوان میڈیکل کالج ہاسپٹل منتقل کیا گیا تھا اور وہاں وہ چند گھنٹوں بعد جانبر نہ ہوسکے ۔ سی پی ایم کے ریاستی سکریٹری سرجئے کانتا مصرا نے ترنمول کانگریس پر ریاست میں دہشت کا ماحول پیدا کرنے کا الزام عائد کیا ۔ انہوں نے کہا کہ پہلے نور اسلام مستری اور توحید السلام کے بعد اب شیخ فضل حق اور دکھی رام دل کو نشانہ بنایا گیا ہے اور لاٹھیوں سے حملہ کرتے ہوئے انہیں ہلاک کیا گیا ۔ یہ انتخابات میں شکست کی مایوسی کا نتیجہ ہے ۔

TOPPOPULARRECENT