Tuesday , December 12 2017
Home / ہندوستان / مغربی بنگال میں مابعد انتخابات تشدد ٹی ایم سی اور سی پی ایم کے کارکنان زخمی

مغربی بنگال میں مابعد انتخابات تشدد ٹی ایم سی اور سی پی ایم کے کارکنان زخمی

سوری / بالور گھاٹ ( مغربی بنگال ) ۔ 18 ۔ اپریل : ( سیاست ڈاٹ کام ) : مغربی بنگال کے اضلاع بیربھوم اور ساوتھ دیناج پور میں مابعد انتخابات تشدد میں 9 افراد زخمی ہوگئے ۔ پولیس نے بتایا کہ ان اضلاع میں کل دوسرے مرحلہ کے انتخابات منعقد ہوئے تھے ۔ بیربھوم ضلع کے گھوراپارا گاؤں میں کل شام رائے دہی اختتام پذیر ہونے کے بعد ترنمول کانگریس اور سی پی ایم کے حامیوں کے درمیان تصادم میں 7 افراد زخمی ہوگئے ۔ زخمیوں کو سوری ہاسپٹل میں شریک کروایا گیا ہے ۔ پولیس نے بتایا کہ حریف پارٹی کے بم حملہ میں ایک سی پی ایم کارکن زخمی ہونے کے بعد تشدد بھڑک اٹھا ۔ اگرچیکہ صورتحال پر فی الفور قابو پالیا گیا لیکن آج صبح تازہ جھڑپ میں بموں کا بے دریغ استعمال کیا گیا ۔ دراں اثناء پولیس سپرنٹنڈنٹ ایس رمن مصرا نے فرائض سے غفلت برتنے پر پنوری اوسی مسٹر دیبابرتا سنہا کو معطل کردیا ہے ۔ الیکشن کمیشن کی سفارش پر یہ کارروائی کی گئی ہے ۔ جنوبی دیناج پور کے بالور گھاٹ ٹاون میں بھی رائے دہی کے اختتام پر کل شب آر ایس پی حامیوں کے حملہ میں ترنمول کانگریس کے 2 ورکرس زحمی ہوئے ۔ پولیس نے بتایا کہ آر ایس پی کارکنان ٹی ایم ایس کے حامیوں سبرتارائے اور کوکن سرکار کے مکان پہنچے اور ٹی ایم سی کے حق میں ووٹ دینے پر زد و کوب کیا ۔ زخمیوں کو بالو گھاٹ ڈسٹرکٹ ہاسپٹل میں شریک کروایا گیا ہے جب کہ آر ایس پی کے ایک کارکن گوکل بسواس کو گرفتار کرلیا گیا ۔

TOPPOPULARRECENT