Wednesday , February 21 2018
Home / ہندوستان / مغربی بنگال میں پدماوتی کی ریلیز کیلئے انتظامات

مغربی بنگال میں پدماوتی کی ریلیز کیلئے انتظامات

سنجے لیلا بھنسالی اور ٹیم کا خیرمقدم کیا جائے گا: ممتا بنرجی
کلکتہ،23نومبر(سیاست ڈاٹ کام)مغربی بنگال کی چیف منسٹر ممتا بنرجی نے آج کہا کہ وہ ’’پدماوتی‘‘ کے ڈائرکٹر سنجے لیلا بھنسالی اور ان کی ٹیم کا اپنی ریاست میں خیرمقدم کریں کی اور ان کی فلم کے پریمئر اور ریلیز کے لیے خصوصی انتظامات کئے جائیں گے۔ ممتا بنرجی نے اس فلم پر پیدا شدہ تنازعہ کو انہوں نے ملک میں آزادی اظہار خیال کو درہم برہم کرنے کے مقاصد پر مبنی ایک طے شدہ منصوبہ قرار دیا تھا۔ بھنسالی کی فلم پر جاری تنازعہ کے درمیان مغربی بنگال کی چیف منسٹر ممتا بنرجی نے آج کہا ہے کہ سنجے لیلا بھنسالی اور ان کی ٹیم کے ممبران کامغربی بنگال میں خیر مقدم ہے اور وہ اپنی فلم کا خصوصی پریمئر پروگرام یہاں رکھ سکتے ہیں۔ چیف منسٹر ممتا بنرجی نے انڈیا ٹوڈے کنکلیو ایسٹ 2017کے پروگرام میں کہا کہ’’اگر (بھنسالی اور پروڈیوسر)اپنی فلم پدما وتی کو دوسری ریاستوں میں ریلیز نہیں کرپارہے ہیں تو ہم اپنی ریاست میں پریمئیر کیلئے خصوصی انتظامات کرنے کو تیار ہیں ۔بنگال کو یہ کرکے بہت ہی خوشی اور بہت ہی فخر ہوگا ۔سنجے لیلا بھنسالی اور ان کی ٹیم کا بنگال میں خیرمقدم ہے ‘‘20نومبر کو وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے سنجے لیلا بھنسالی کی فلم پر جاری تنازع پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ یہ ملک سے اظہار رائے کی آزادی کو ختم کرنے کا منصوبہ ہے ۔انہوں نے کہا کہ یہ نہ صرف افسوس ناک ہے بلکہ ایک سیاسی جماعت کا منظم سازش ہے ۔ہم اس سپر ایمرجنسی کی مذمت کرتے ہیں۔فلم انڈسٹری کے تمام افرد کو ایک ساتھ جمع ہوکر اس کے خلاف احتجاج کرنی چاہیے۔ یہ فلم یکم دسمبر کو ریلیز ہونے والی تھی ۔مگر تنازع کے بعد سنجے لیلا بھنسالی کی ڈائریکشن اوردیپیکا پادو کون، رنویر سنگھ اور شاہد کپور پر فلمائی گئی اس فلم کے پروڈیوسر ویکوم 18نے رضاکارانہ طور پر ریلیز کی تاریخ کو آگے بڑھا دیا ہے ۔یہ فلم راجپوتوں کی رانی پدماوتی پر بنائی گئی ہے ۔دائیں بازوں کی جماعتوں کا الزام ہے کہ تاریخ کو غلط انداز میں پیش کیا گیا ہے ۔یہ فلم اس وقت سے ہی تنازع کا شکار ہے جب سے سنجے لیلا بھنسالی شوٹنگ شروع کی تھی ۔
جے پور میں راجپوت کرنی سینا کے ممبروں نے حملہ کیا تھا اور شوٹنگ کی جگہ پر توڑ پھوڑ بھی کی گئی تھی۔ اکتوبر میں ہی اس فلم کا پہلا پوسٹر جاری ہوا تھا ۔راجپوت اور دیگر آرگنائزیشنوں کا الزام ہے کہ بھنسالی نے تاریخ کو توڑ مروڑ کر پیش کیا ہے ۔جب کہ سنجے لیلا بھنسالی نے بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس فلم میں تاریخ کے ساتھ چھیڑ چھاڑ نہیں کی گئی ہے اور نہ علاء الدین خلجی کا رول کرنے والے رنویر سنگھ کے ساتھ پدماوتی کا رول کررہی دییکا کی کوئی شوٹنگ ہے ۔

TOPPOPULARRECENT