Sunday , December 17 2017
Home / Top Stories / مغربی بنگال میں چوتھے مرحلہ میں 78فیصد رائے دہی

مغربی بنگال میں چوتھے مرحلہ میں 78فیصد رائے دہی

کولکاتہ ۔ 25 اپریل ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) مغربی بنگال اسمبلی انتخابات کے چوتھے مرحلہ میں آج 78.05 فیصد رائے دہی ریکارڈ کی گئی ۔ الیکشن کمیشن نے بتایا کہ رائے دہی مجموعی طورپر پرامن رہی تاہم بعض مقامات پر تشدد کے واقعات پیش آئے ۔ ڈم ڈم نارتھ حلقہ میں سی پی آئی ایم امیدوار ٹی بھٹا چاریہ کا ہاتھ اُس وقت زخمی ہوگیا جب اُن کی کار پر سنگباری کی گئی ۔ کمشنر پولیس نیرج سنگھ نے بتایا کہ تین افراد کو گرفتار کرلیا گیا ہے ۔ انھوں نے کہا کہ بوگس رائے دہی ،بوتھ پر قبضے اور بیرونی افراد کی موجودگی کے سلسلے میں اب تک 110 گرفتار یاں عمل میں آئی ہیں۔ دو افراد کو ایک گھر پر حملے کے سلسلے میں گرفتار کیا گیا ۔ سی پی آئی ایم کے حامی ہونے کی بناء اس مکان پر حملہ کیاگیا تھا۔ بیج پور حلقہ میں سی پی آئی ایم کے حامیوں نے الزام عائد کیا کہ اُن کے ساڑھے تین سالہ بچے کو زدوکوب کیا گیا ۔ مغربی بنگال سی پی آئی ایم سکریٹری سورجیہ کانتا مشرا نے بتایا کہ ٹی ایم سی کارکن اُنھیں مسلسل نشانہ بنارہے ہیں ۔ ساڑھے تین سالہ بچہ سے لیکر بائیں بازو امیدواروں کو تک نشانہ بنایا جارہا ہے یہاں تک کہ خواتین تک محفوظ نہیں ۔ انھوں نے کہاکہ عوام ٹی ایم سی کو بیدخل کرتے ہوئے سبق سکھائیں گے ۔ ہوڑہ نارتھ اسمبلی حلقہ میں ترنمول کانگریس امیدوار لکشمی رتن شکلا نے حریف جماعتوں کے امیدوار و بی جے پی لیڈر روپا گنگولی پر پولنگ بوتھس میں گھسنے اور پریسائیڈنگ آفیسر کو دھمکی دینے کا الزام عائد کیا۔ دوسری طرف روپا گنگولی نے پریسائیڈنگ آفیسر پر جانبدارانہ رول کا الزام عائد کیا ہے ۔ بی جے پی امیدوار لاکٹ چٹرجی کو پولنگ ایجنٹ سے بحث کرتے دیکھا گیا ۔

TOPPOPULARRECENT