Tuesday , January 16 2018
Home / Top Stories / مغربی بنگال کو ممکنہ مدد ، مودی کا ممتا بنرجی کو تیقن

مغربی بنگال کو ممکنہ مدد ، مودی کا ممتا بنرجی کو تیقن

نئی دہلی ۔ 9 مارچ ۔ ( سیاست ڈاٹ کام )مرکز کی جانب سے مغربی بنگال کی ترقی میں مدد کیلئے کوئی کسر باقی نہیں رکھی جائے گی ، وزیراعظم نریندر مودی نے آج چیف منسٹر ممتا بنرجی کو یہ یقین دہانی کرائی جنھوں نے قرض کی معافی اور دیگر مالی مدد کے سلسلے میں اُن سے ملاقات کی تھی ۔ مودی کے وزیراعظم بننے کے بعد ممتا بنرجی کی یہ پہلی ملاقات تھی جبکہ دونو

نئی دہلی ۔ 9 مارچ ۔ ( سیاست ڈاٹ کام )مرکز کی جانب سے مغربی بنگال کی ترقی میں مدد کیلئے کوئی کسر باقی نہیں رکھی جائے گی ، وزیراعظم نریندر مودی نے آج چیف منسٹر ممتا بنرجی کو یہ یقین دہانی کرائی جنھوں نے قرض کی معافی اور دیگر مالی مدد کے سلسلے میں اُن سے ملاقات کی تھی ۔ مودی کے وزیراعظم بننے کے بعد ممتا بنرجی کی یہ پہلی ملاقات تھی جبکہ دونوں جماعتوں ترنمول کانگریس اور بی جے پی میں کافی اختلافات چلے آرہے ہیں ۔ ممتا بنرجی نے ریاست کے لئے خصوصی مالی پیاکیج بشمول قرض کی ادائیگی سے معافی کی خواہش کی ۔ نریندر مودی نے کہا ہے کہ وہ مغربی بنگال کی ترقی کیلئے پابند عہد ہیں۔ وزیراعظم سے ملاقات کے بعد پارلیمنٹ کے باہر پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ممتا بنرجی نے کہا کہ انہوں نے وزیراعظم سے ریاست کو قابل ادائیگی فنڈس جاری کرنے کا مطالبہ کیا ہے جو غذائی اجناس کی خریداری کیلئے مختص کی گئی تھی ۔ انہوں نے زیرالتواء ریلوے پراجکٹس کے مسئلہ پر بھی وزیراعظم سے بات چیت کی اور وزیراعظم نے انہیں ہر ممکن مدد کا تیقن دیا اور کہا کہ وزیراعظم کے بموجب ریاست مغربی بنگال کی کارکردگی پر وہ بہت خوش ہیں ۔ اس سوال پر کہ کیا ممتابنرجی نے دریائے تیستا کے پانی میں شراکت داری کے بنگلہ دیش کے ساتھ معاہدہ پر بھی وزیراعظم سے بات چیت کی ۔ ممتابنرجی نے اس سوال کا جواب نفی میں دیا ۔ دریں اثناء اپنی 24ویں ریاستی کانفرنس سے جو مغربی بنگال میں مقرر ہے سی پی ایم قائدین نے چیف منسٹر اور وزیراعظم کی ملاقات پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ وہ چاہتے ہیں کہ ترنمول کانگریس کو سی بی آئی کے شکنجہ سے بچایا جائے ۔مودی ۔ ممتا ملاقات کا یہی بنیادی مقصد ہے ۔ سی پی ایم پولیٹ بیورو کے رکن سیتارام یچوری نے کہا کہ دونوں میں پوشیدہ طورپر معاہدہ ہوچکا ہے چنانچہ مستقبل میں نریندر مودی ‘ ممتابنرجی پر اور ممتابنرجی نریندر مودی پر تنقید سے گریز کریں گی ۔ انہوں نے کہا کہ سی پی ایم اپنی غلطیوں سے سبق سیکھ چکی ہے اور جلد ہی ترمیمات کرے گی ۔ بائیں بازو کی حکومت کی واپسی نہ صرف دہشت گردی کے راج کو ختم کرنے کیلئے ضروری ہے بلکہ اس لئے بھی ضروری ہے کہ بائیں بازو عوام کی فلاح و بہبود کی فکر کرتا ہے جبکہ ترنمول کانگریس عوام کو لوٹتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مرکز نے کہا تھا کہ اچھے دن آرہے ہیں‘ لیکن اب عوام کشور کاگیت گارہے ہیں’’ کوئی لوٹا دے میرے بیتے ہوئے دن‘‘ جنرل سکریٹری پرکاش کرت نے کہا کہ مودی حکومت صرف سرمایہ داروں اور کارپوریٹس کے لئے ہے۔ گھر واپسی پر تنقید کرتے ہوئے سی پی ایم قائد محمد سلیم نے کہا کہ یہ ممتا کی گھر واپسی ہے جو کبھی بی جے پی کے ساتھ تھیں ۔ سی بی آئی مودی اور بی جے پی کے اشاروں پر ناچ رہی ہے اور ممتا دیدی اسی کے نقش قدم پر چل رہی ہیں تاکہ اپنی پارٹی کو سی بی آئی سے بچاسکیں ۔

TOPPOPULARRECENT