Friday , June 22 2018
Home / سیاسیات / مفتی حکومت ریاستی پرچم کے بارے سرکلر سے دست بردار

مفتی حکومت ریاستی پرچم کے بارے سرکلر سے دست بردار

جموں /13 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) سیاسی جماعتوں کی تنقیدوں کے پیش نظر مفتی محمد سعید کی حکومت نے آج اس متنازعہ سرکلر سے دست برداری اختیار کرلی، جس میں دستوری حکام سے ریاستی پرچم کے تقدس کی برقراری کے لئے کہا گیا تھا۔ حکومت نے کہا کہ یہ سرکلر ’’مجاز ارباب‘‘ کی جانب سے منظور نہیں ہوا تھا۔ حکومت نے مزید وضاحت کی کہ اس سرکلر کی اجرائی کا سبب

جموں /13 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) سیاسی جماعتوں کی تنقیدوں کے پیش نظر مفتی محمد سعید کی حکومت نے آج اس متنازعہ سرکلر سے دست برداری اختیار کرلی، جس میں دستوری حکام سے ریاستی پرچم کے تقدس کی برقراری کے لئے کہا گیا تھا۔ حکومت نے کہا کہ یہ سرکلر ’’مجاز ارباب‘‘ کی جانب سے منظور نہیں ہوا تھا۔ حکومت نے مزید وضاحت کی کہ اس سرکلر کی اجرائی کا سبب بننے والے حالات کی جانچ کے بعد مناسب انتظامی کارروائی کی جائے گی۔ ایک سرکاری ترجمان نے آج یہاں کہا کہ اس سرکلر کا مسودہ 12 مارچ کو اجرائی سے قبل مجاز اتھارٹی سے منظور نہیں کرایا گیا، اس لئے اسے فوری اثر کے ساتھ واپس لیا جاتا ہے۔ دریں اثناء چیف منسٹر جموں و کشمیر مفتی سعید نے آج گورنر این این ووہرا سے یہاں راج بھون میں ملاقات کی

اور انتظامی امور کے بشمول متعدد مسائل پر تبادلۂ خیال کیا۔ چیف منسٹر کی حیثیت سے حلف برداری کے بعد مفتی سعید کی گورنر کے ساتھ یہ پہلی باقاعدہ میٹنگ تھی۔ گورنر ووہرا اور چیف منسٹر سعید نے یونیورسٹیوں اور اعلیٰ تعلیم کے اداروں میں تدریسی تقررات اور سبکدوشی کی عمر سے متعلق اہم امور پر غور و خوض کیا، نیز سرکاری کاموں میں اثر پزیری لانے، انتظامی ڈھانچے سے کاہلی اور بدعنوانی کو ختم کرنے کے بارے میں بھی غور کیا۔ چیف منسٹر نے حکومت کے ان اقدامات سے بھی گورنر کو واقف کرایا، جو سماجی و معاشی ترقی میں تیزی پیدا کرنے کے لئے تجویز کئے گئے ہیں۔ دونوں نے اہم مسائل پر غور و خوض کے لئے وقفہ وقفہ سے ملاقات سے اتفاق کیا۔

TOPPOPULARRECENT