Wednesday , December 13 2017
Home / شہر کی خبریں / مقبرہ اکبر جاہ سنتوش نگر سے نایاب ماربل تخت کی مکہ مسجد منتقلی

مقبرہ اکبر جاہ سنتوش نگر سے نایاب ماربل تخت کی مکہ مسجد منتقلی

حیدرآباد ۔ 24۔ مئی (سیاست نیوز) مقبرہ اکبر جاہ سنتوش نگر میں واقع تاریخی بلاک ماربل تخت کو مکہ مسجد منتقل کرنے اوقاف کمیٹی ایچ ای ایچ دی نظام کی کوششوں کو اس وقت دھکا لگا جب نواب اکبر جاہ کے وارثین نے مخالفت کرتے ہوئے بلاک ماربل بنچ کی منتقلی کو روک دیا ۔تاہم سپرنٹنڈنٹ مکہ مسجد عبدالقدیر صدیقی کی مساعی سے معاملہ کی یکسوئی ہوگئی اور توقع ہے کہ جمعرات کی صبح آرکیالوجیکل سروے آف انڈیا کے عہدیدار اس تخت کو مکہ مسجد منتقل کردیں گے ۔  بتایا جاتا ہے کہ اوقاف کمیٹی ایچ ای ایچ دی نظام کے سکریٹری نے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ساؤتھ زون کو مکتوب روانہ کرتے ہوئے اس بات کی اطلاع دی کہ اوقاف کمیٹی نے بلاک ماربل کو تاریخی مکہ مسجد میں نصب کرنے کی منظوری  دیدی ہے ۔ مقبرہ اکبر جاہ ایچ ای ایچ دی نظام کے تولیت میں ہے۔ بلاک ماربل کے اس تاریخی شاہکار کو مکہ مسجد میں کسی موزوں مقام پر منتقل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ۔ اس فیصلہ کے مطابق سپرنٹنڈنٹ مکہ مسجد اپنی ٹیم کے ہمراہ مقبرہ اکبر جاہ سنتوش نگر پہنچے لیکن نواب اکبر جاہ کے وارثین میر حسن علی خاں ، میر ماجد علی خاں ، میر مبشر علی خاں اور دوسروں نے اس اقدام کی ابتداء میں مخالفت کی اور منتقلی کو روک دیا۔ تاہم بعد میں وہ اوقاف کمیٹی کے فیصلے کو ماننے کے لیے تیار ہوگئے تاکہ اس نادر و نایاب تخت کی حفاظت ہوسکے ۔ موجودہ علاقے میں اشرار کی نظریں اس تخت پر تھیں ۔ بتایا جاتا ہے کہ اس بلاک ماربل چبوترہ کے تحفظ کو یقینی بنانے کیلئے اسے مکہ مسجد منتقل کرنے کی تجویز تھی۔ سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل نے سپرنٹنڈنٹ مکہ مسجد کو یہ تخت کسی موزوں مقام پر نصب کرنے کی ہدایت دی تھی ۔ نواب اکبر جاہ کے لواحقین کے اعتراض کے بعد یہ معاملہ رک گیا اور مقامی پولیس نے فریقین کو مشورہ دیا کہ وہ باہمی مشاورت کے ذریعہ اس تنازعہ کی یکسوئی کرے۔

TOPPOPULARRECENT