Tuesday , August 21 2018
Home / Top Stories / مقتداء الصدرکا عراق میں اصلاحات کا تیقن

مقتداء الصدرکا عراق میں اصلاحات کا تیقن

BAGHDAD, MAY 20 :- Iraqi Shi'ite cleric Moqtada al-Sadr (L) speaks during a news conference with Iraqi prime Minister Haider al-Abadi in Baghdad, Iraq May 20, 2018. REUTERS-9R

بغداد۔20مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) عراق میں مقتداء الصدر نے جو شیعہ مذہبی رہنما ہیں اور حالیہ قومی انتخابات میں تشکیل حکومت کیلئے درکار اکثریت پہلی بار حاصل کرچکے ہیں تیقن دیا کہ ان کے دور اقتدار میں عراق میں اصلاحات لائی جائیں گی ۔ خود مقتداء الصدر نے نسبتاً انکسار کا رویہ اختیار کیا لیکن ایران پر بالواسطہ طور پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ حکومت ایران اُن کی تشکیل حکومت میں رکاوٹ پیدا کررہی ہیں ۔ قبل ازیں مقتداء الصدر نے نیم فوجی تنظیم مہدی آرمی قائم کی تھی ‘ وہ امریکہ اور اسرائیل دونوں کے مخالف ہیں ۔ ایران بھی حال ہی میں مقتداء الصدر کے سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کے بارے میں تبصروں پر ناراض ہیں اور اس نے ایک نیابتی جنگ عراق میں مقتداء الصدرکے خلاف چھیڑ رکھی ہے ۔ نیم فوجی تنظیموں فتح اور مہدی آرمی کے درمیان انتخابات کیلئے اتحاد ہوا ۔ 329رکنی قومی اسمبلی میں مقتداء الصدر کو قطعی اکثریت کیلئے 165 نشستوں کی ضرورت ہے ۔ نیم فوجی تنظیمیں وزارت داخلہ پر مکمل کنٹرول رکھتی ہیں

TOPPOPULARRECENT