Saturday , November 18 2017
Home / شہر کی خبریں / مقررہ وقت پر پراجکٹس کی عدم تکمیل پر سخت کارروائی

مقررہ وقت پر پراجکٹس کی عدم تکمیل پر سخت کارروائی

صنعت و آئی ٹی محکموں کا جائزہ اجلاس ، کے ٹی آر وزیر کا خطاب
حیدرآباد ۔ 17 ۔ اگست : ( سیاست نیوز ) : وزیر آئی ٹی و صنعت تلنگانہ کے ٹی آر نے پالیسیوں کے ثمر آور نتائج کے لیے مقررہ وقت پر پراجکٹس تکمیل نہ کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کرنے کا انتباہ دیا ۔ آج کے ٹی آر نے محکمہ جات صنعت اور آئی ٹی کے عہدیداروں کا اجلاس طلب کرتے ہوئے مختلف پروگرامس اور پراجکٹس کا جائزہ لیا اور کہا کہ حکومت تلنگانہ نے گذشتہ تین سال کے دوران کئی اسکیمات و پالیسیوں کو متعارف کرایا ہے ۔ آئندہ 2 سال میں جن پالیسیوں کے وعدے کئے گئے ہیں اس کی تکمیل کے لیے کاموں میں تیزی پیدا کرنے پر زور دیا ۔ حکومت نے جن پالیسیوں اور پروگرامس کا اعلان کیا ہے ۔ اس کی ملک بھر میں ستائش ہورہی ہے ۔ ریاست کا رخ کرنے والی کمپنیوں اور سرمایہ کاری کے پیش نظر کام کرنے کی عہدیداروں کو ہدایت دی ۔ ریاستی وزیر کے ٹی آر نے دونوں محکمہ جات کے عہدیداروں کو ہر تین ماہ میں ایک مرتبہ ایکشن ٹیکن رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت دی ۔ ان کے فیصلے پر عمل نہ کرنے والے عہدیداروں کے خلاف سخت کارروائی کرنے کا انتباہ دیا ۔ انہوں نے کہا کہ گذشتہ سال بزنس کے معاملے میں ریاست تلنگانہ کو پہلا مقام حاصل ہوا تھا ۔ اس مقام کو جاریہ سال بھی برقرار رکھنے کے لیے مزید چستی پھرتی سے کام کرنے کا عہدیداروں کو مشورہ دیا ۔ اس اجلاس میں ریاستی وزیر صنعت کے ٹی آر نے ہر ایک پالیسی ، پروگرام اور پراجکٹس کے بارے میں عہدیداروں سے وضاحت طلب کی ۔ حیدرآباد فارماسٹی ، میڈیکل ڈیوائزس پارک کے بارے میں عہدیداروں سے تفصیلات حاصل کی ۔ عہدیداروں نے بتایا کہ نئے کمپنیوں کے قیام کے لیے 8500 ایکڑ اراضی کا ڈیمانڈ ہے ۔ ماحولیاتی منظوریوں کے لیے منعقد ہونے والے عوامی سماعت میں مقامی عوام کو فارما سٹی سے ہونے والے فائدے ، ملازمتوں پارک کے زیرو لکویڈ ڈسچارج سے کوئی آلودگی نہ پھیلنے کے بارے میں شعور بیدار کرنے کی وزیر صنعت نے عہدیداروں کو ہدایت دی ۔ ایرو اسپیس میں مزید سرمایہ حاصل کرنے کی مساعی کرنے پر زور دیا ۔ کئی باوقار کمپنیاں حیدرآباد میں موجود ہیں اور کئی انٹرنیشنل کمپنیاں حیدرآباد میں سرمایہ کاری کرنے کے لیے اپنی دلچسپی دیکھا رہے ہیں ۔ عہدیداروں نے کے ٹی آر کو بتایا کہ تلنگانہ فائبر گریڈ پراجکٹ کو مشن بھاگیرتا پراجکٹ سے مربوط کرلیا جائے گا ۔ ٹاسک کے ذریعہ ابھی تک انجینئرنگ طلبہ کو تربیت دی جارہی ہے ۔ بہت جلد اس تربیتی پروگرام کو ہیلت سیکٹر ، فارما آٹو موٹیوس شعبوں تک توسیع دی جائے گی ۔ کے ٹی آر نے ٹاسک کے تربیتی کلاس کو مرحلہ واری اساس پر اضلاع میں بھی توسیع دینے کی عہدیداروں کو ہدایت دی ۔ اس جائزہ اجلاس میں محکمہ صنعت کے پرنسپل سکریٹری جیش رنجن ، کمشنر ندیم احمد ، ٹی ایس آئی سی سی کے ایم ڈی وینکٹ نرسمہا ریڈی کے علاوہ محکمہ جات صنعت و آئی ٹی کے دوسرے عہدیدار بھی موجود تھے ۔۔

TOPPOPULARRECENT