Tuesday , December 12 2017
Home / Top Stories / ملائم کو وزیر اعظم اور اہول کو نائب وزیر اعظم بنایا جائے

ملائم کو وزیر اعظم اور اہول کو نائب وزیر اعظم بنایا جائے

کانگریس۔ سماج وادی پارٹی میں اتحاد کیلئے اکھلیش یادو کا نیا فارمولا
نئی دہلی۔/4ڈسمبر، ( سیاست ڈاٹ کام ) اتر پردیش کے چیف منسٹر اکھلیش یادو نے آج یہ تجویز پیش کی ہے کہ کانگریس کے ساتھ سماجوادی پارٹی اتحاد ممکن ہوسکتا ہے بشرطیکہ پارٹی سربرا ملائم سنگھ یادو کو وزیر اعظم اور راہول گاندھی کو نائب وزیر اعظم بنایا جائے اکھلیش یادو نے یہ تبصرہ ہندوستان ٹائمز لیڈر شپ سمٹ میں مذاکرات کے دوران کیا۔ اس موقع پر نائب صدر راہول گاندھی بھی موجود تھے لیکن انہوں نے ردعمل ظاہر کرنے سے انکارکردیا۔ اتر پردیش کے چیف منسٹر سے یہ دریافت کیا گیا کہ راہول گاندھی کے ساتھ اپنے شخصی نوعیت کے تعلقات سیاسی سطح پر کانگریس کے ساتھ توسیع دینے کیلئے آمادہ ہیں ، جس پر انہوں نے کہا کہ یہ سوال مجھ سے اس لئے پوچھا گیا ہے کہ میں ایک سماجوادی ( سوشلسٹ ) ہوں اور مجھے اپنے والد ملائم سنگھ یادو کی سرپرستی حاصل ہے اور میری دیرینہ خواہش ہے کہ نیتا جی کے خواب کو شرمندہ تعبیر کروں جس کیلئے میں سرگرم عمل ہوگیا ہوں۔ اگر ملائم جی وزیر اعظم اور راہول گاندھی( راہول گاندھی کی طرف اشارہ ) نائب وزیر اعظم کیلئے آمادہ ہوجائیں تو میں کانگریس کے ساتھ انتخابی مفاہمت کیلئے کوشش کروں گا۔ تاہم اکھلیش یادو نے اس سوال کو ٹال دیا کہ انہیں حریف بہوجن سماج پارٹی کے ساتھ اتر پردیش میں 2017 کے اسمبلی انتخابات کیلئے مفاہمت کریں گے جیسا کہ بہار میں جنتا دل متحدہ اور راشٹریہ جنتا دل نے اتحاد تشکیل دیا ہے۔ انہوں نے طنزیہ انداز میں کہا کہ مایاوتی کی خواہش ہے کہ پتھر خود ہاتھی کا مجسمہ تیار کرے جو کہ ناممکن ہے جس کے باعث میں نے یہ نیا سیاسی فارمولا پیش کیا ہے۔ قبل ازیں اکھلیش یادو نے قطعی طور پر کہا تھا کہ کسی بھی جماعت کے ساتھ کوئی مذاکرات نہیں کئے جائیں گے جس پر بات کرنا فی الحال مناسب نہیں ہوگا۔ ہندوستان کی کثیر آبادی والی ریاست کے 42سالہ چیف منسٹر نے کہا کہ بی جے پی یا اس کی ہم خیال جماعت سے تعلقات کا کوئی امکان نہیں ہے کیونکہ ان کی تفرقہ پرستی اور اشتعال انگیزیاںاس کی اجازت نہیں دیتے۔

TOPPOPULARRECENT