Friday , June 22 2018
Home / Top Stories / ملائیشیائی طیارہ کے ملبہ سے219نعشیں برآمد

ملائیشیائی طیارہ کے ملبہ سے219نعشیں برآمد

کیف۔20جولائی( سیاست ڈاٹ کام)ملائیشیا کے مارگرائے جٹ طیارے کے ملبہ سے اب تک 219نعشیں برآمد کی جاچکی ہے اور موافق ماسکو باغیوں نے ان پر کنٹرول حاصل کرلیا ہے ۔ دوسری طرف صدر روس ولایمیرپوٹین پر عالمی دباؤ بڑھ رہا ہے کہ وہ یوکرین کے باغیوں کے زیراثر علاقہ میں مقامی حادثہ تک بے ضرررسائی یقینی بنائے ۔ یوکرین کے نائب وزیراعظم ولودمیرگرویزم

کیف۔20جولائی( سیاست ڈاٹ کام)ملائیشیا کے مارگرائے جٹ طیارے کے ملبہ سے اب تک 219نعشیں برآمد کی جاچکی ہے اور موافق ماسکو باغیوں نے ان پر کنٹرول حاصل کرلیا ہے ۔ دوسری طرف صدر روس ولایمیرپوٹین پر عالمی دباؤ بڑھ رہا ہے کہ وہ یوکرین کے باغیوں کے زیراثر علاقہ میں مقامی حادثہ تک بے ضرررسائی یقینی بنائے ۔ یوکرین کے نائب وزیراعظم ولودمیرگرویزمین نے بتایا کہ ایمرجنسی ورکرس نے 27مزید نعشیں ملبہ کے مقام سے برآمد کی ہیں۔ جملہ192نعشوں اور 8بکھرے ہوئے اعضاء کو ریفریجریٹیڈ ٹرین میں رکھا گیا ہے ۔ ملائیشیاء ایئر لائنس بوئنگ 777 طیارے میں 298مسافر سوار تھے اور یہ ایمسٹرڈم سے کوالالمپور کی طرف جارہا تھا کہ کرسنی لوچ کے مقام پر اسے مارگرایا گیا ۔سمجھا جاتا ہے کہ طیارہ MH17پر باغیوں کے زیر اثر علاقہ سے زمین سے فضاء میں وار کرنے والا میزائل فائر کیا گیا ۔

اس کے نتیجہ میں طیارے میں سوار تمام 298افراد ہلاک ہوگئے ۔موافق روس علحدگی پسندوں نے تمام 192نعشوں کو ریفریجریٹیڈ ٹرین میں رکھا ہے اور ان کی حوالگی کیلئے بات چیت جاری ہے ۔ خودساختہ ڈونسک عوامی جمہوریہ کے وزیراعظم الگزینڈر بروڈائل نے کہا ہے کہ طیارہ کے ٹکڑے یکجا کئے گئے ہیں اور حادثہ کے مقام سے بلیک باکسیس برآمد کرلئے گئے ہیں ۔ انہوں نے کہا ہے کہ اسے بین الاقوامی ماہرین کے حوالے کیا جائے گا ۔ بروڈائل نے کہا کہ باغیوں نے کئی نعشوں کو اُن کے لواحقین کاانتظار کئے بغیر ہی ٹرینوں میں بھر دیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ماہرین کے یہاں پہنچنے تک اسے ریفریجریٹیڈ ٹرین میں رکھا جائے گا ۔انہوں نے کہا کہ ہم مزید انتظار نہیں کرسکتے کیونکہ یہاں گرمی زیادہ ہے اور یہ خطہ جنگلی جانوروں کا ہے ۔ یوروپی ممالک اور امریکہ نے روس کو خبردار کیا ہے کہ وہ تحقیقاتی عہدیداروں اور راحت کاری کارکنوں کی حادثہ کے مقام تک رسائی یقینی بنائیں ۔امریکی سکریٹری آف اسٹیٹ جان کیری نے کہا کہ ہم ابھی قطعی نتیجہ پر نہیں پہنچے ہیں لیکن بعض ایسے پہلوہے جن کیلئے روس کو ذمہ دار قرار دیا جائے گا ۔

TOPPOPULARRECENT