Tuesday , September 25 2018
Home / دنیا / ملائیشیا میں لفظ ’’اللہ ‘‘ کے عیسائیوںکی جانب سے استعمال کے مقدمہ میں ناکامی

ملائیشیا میں لفظ ’’اللہ ‘‘ کے عیسائیوںکی جانب سے استعمال کے مقدمہ میں ناکامی

کوالالمپور۔ 23 جون (سیاست ڈاٹ کام) ملائیشیا کے عیسائیوں کو خدا کے لئے لفظ ’’اللہ‘‘ استعمال کرنے کے مقدمہ میں ملک کی اعلیٰ ترین عدالت میں ناکامی ہوئی جبکہ اعلیٰ ترین عدالت کی 7 ججوں پر مشتمل بینچ نے فیصلہ سنایا کہ تحت کی عدالت کا فیصلہ جس میں حکومت کے عیسائیوں کی جانب سے لفظ ’’اللہ‘‘ استعمال کرنے پر امتناع عائد کیا تھا، جائز اور قانونی ہے۔ چیف جسٹس عارفین ذکریا کی زیرقیادت سات رکنی بینچ نے کئی برسوں سے جاری مقدمہ کا فیصلہ سناتے ہوئے تحت کی عدالت کے فیصلے کو ’جائز اور قانونی ‘قرار دیا۔ یہ فیصلہ چار کے مقابل تین ججس کی رائے کی بنیاد پر کیا گیا۔ یہ پہلی بار ہے کہ ملائیشیا میں اتنی کثیر تعداد میں ججس پر مشتمل بینچ کسی مقدمہ کے فیصلے کے لئے قائم کی گئی تھی۔ فیصلہ پر تبصرہ کرتے ہوئے صباح اور ساراواک کے چیف جسٹس رچرڈ ملنجوم نے کہا کہ یہ درخواست غور کیلئے عوامی اہمیت کے مقدمات میں شامل کی جانی چاہئے تھی۔ مرکزی عدالت کو قانون کے سوالات کی یکسوئی کرنی چاہئے تھی۔ کیتھولک چرچ کے نقیب روزنامہ میں خدا کے لئے لفظ ’’اللہ‘‘ استعمال کیا گیا تھا جسے غیرقانونی قرار دیتے ہوئے وزارتِ داخلہ ملائیشیا نے عیسائیوں کی جانب سے لفظ ’’اللہ‘‘ استعمال پر امتناع عائد کردیا تھا جس کے خلاف کیتھولک چرچ عدالت سے رجوع ہوا تھا جہاں فیصلہ اس کے خلاف ہونے پر ہائیکورٹ میں اپیل کی گئی تھی جس نے وزارتِ داخلہ کے حکم نامہ کی تائید کردی۔

TOPPOPULARRECENT