Wednesday , September 19 2018
Home / ہندوستان / ملائیشیا کے طیارہ کی تلاش جاری، ہندوستان مددکیلئے تیار

ملائیشیا کے طیارہ کی تلاش جاری، ہندوستان مددکیلئے تیار

کوالالمپور ؍ بیجنگ ۔ 12 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) ملائیشیا کے لاپتہ طیارہ کی تلاش آج پانچویں دن بھی جاری رہی۔ حکام نے کہا کہ طیارہ جس میں 239 افراد سوار ہیں، رابطہ منقطع ہونے سے قبل اپنی سمت تبدیل کرسکتا ہے۔ بین الاقوامی تلاشی مہم کا اس کے اصل مقام سے سینکڑوں میل دور تک وسعت دے کر انڈومان کے سمندر تک احاطہ کیا گیا ہے۔ ملائیشیاء کی فضائیہ کے س

کوالالمپور ؍ بیجنگ ۔ 12 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) ملائیشیا کے لاپتہ طیارہ کی تلاش آج پانچویں دن بھی جاری رہی۔ حکام نے کہا کہ طیارہ جس میں 239 افراد سوار ہیں، رابطہ منقطع ہونے سے قبل اپنی سمت تبدیل کرسکتا ہے۔ بین الاقوامی تلاشی مہم کا اس کے اصل مقام سے سینکڑوں میل دور تک وسعت دے کر انڈومان کے سمندر تک احاطہ کیا گیا ہے۔ ملائیشیاء کی فضائیہ کے سربراہ نے آج کہا کہ فوجی راڈر پر ایک روشنی کا نقطہ نظر آیا تھا اور یہ آبنائے مالاکا میں دکھائی دینے کے بعد اچانک غائب ہوگیا جس سے یہ شبہ ہیکہ طیارہ اسی علاقہ میں لاپتہ ہوا ہے۔

ملائیشیاء نے لاپتہ طیارہ کی تلاشی کیلئے ہندوستان سے بھی مدد طلب کی ہے۔ صدرجمہوریہ پرنب مکرجی نے کل ہی حکومت ملائیشیاء کو مکتوب لکھ کر طیارہ کی تلاش میں تعاون کرنے کی پیشکش کی تھی۔ ہندوستانی فضائیہ اور بحریہ نے تمام طیاروں کو تیار رہنے کا حکم دیا ہے تاکہ ہدایت ملنے پر فوری تلاشی کا کام شروع کیا جاسکے۔ ہندوستانی وزارت دفاع کے عہدیداروں نے یہ بات بتائی۔ ملائیشیاء نے طیارہ سے متعلق اطلاعات و معلومات اکھٹا کرنے کیلئے کئی افراد کو مقرر کیا ہے۔ ملائیشیاء ایرفورس کے سربراہ جنرل روزعلی داؤد نے کہا کہ فضائیہ نے اس امکان کو مسترد نہیں کیا ہیکہ لاپتہ طیارہ واپس ہوسکتا ہے۔ راڈار سے غائب ہونے سے قبل اس نے اپنا رخ موڑ لیا تھا۔ اس لئے طیارہ کی تلاش اور آپریشن کو پنانگ کے سمندر کے بشمول دیگر سمندری علاقوں تک وسعت دی گئی ہے۔ بیجنگ کا بوئنگ 77-200 طیارہ میں پانچ ہندوستانیوں کے بشمول 227 مسافر اور عملہ 12 ارکان اور ایک ہندوستانی نژاد شہری شامل ہیں۔

روز علی داؤد نے اس رپورٹ کی تردید کی کہ انہوں نے دعویٰ کیا تھا کہ انہیں اس بات کی توثیق ہوئی ہیکہ لاپتہ طیارہ کا ملاکا کے علاقہ میں واقع پالو برک کے قریب پتہ چلا ہے۔ ملیازبان کے انڈومان میں کل شائع ہوئی خبر غیردرست ہے۔ ہفتہ کی صبح سے جاری تلاشی اور آپریشن مہم میں شدت لائی گئی مگر اب تک پتہ چلانے میں ناکام رہی ہے۔ جنوبی چیان کے سمندر میں جیٹ لائنز کے پائے جانے کی اطلاع بھی درست نہیں تھی۔ حکام نے ایرٹریفک کنٹرول سے طیارہ کے آخری رابطہ کے مقام کو ہی ایک پوائنٹ متصور کررہے ہیں۔ طیارہ جس وقت لاپتہ ہوا اس وقت یہ فضاء میں 35000 فٹ بلندی سے پرواز کررہا تھا۔ اس طیارہ کی تلاش کیلئے 34 طیارے اور 40 سمندری جہاز اور 10 ملکوں کی ٹیمیں مصروف ہیں۔ اسی دوران ویتنام نے کہا کہ اس نے اپنے آبگیر علاقوں میں تلاشی مہم عارضی طور پر روک دی ہے۔ نئی دہلی میں وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ ہم نے ملائیشیاء کی مدد کرنے کی تیاری کرلی ہے۔ ہم ملائیشیا کے ساتھ تمام تفصیلات و معلومات میں رابطہ رکھے ہوئے ہیں۔

وزیراعظم ملائیشیاء نجیب رزاق نے کہا کہ حکام لاپتہ طیارہ کی تلاش میں ہر ممکنہ کوشش کررہے ہیں۔ انہوں نے عوام سے اجتماعی طور پر دعا کی اپیل کی کہ طیارہ کی تلاشی مہم کامیاب ہوجائے۔ ہم کو اللہ تعالیٰ کی مدد کی ضرورت ہے۔ ہم تمام کو حکومت کی کوششوں میں شامل ہوکر اجتماعی طور پر دعا کرنی چاہئے۔ طیارہ کے بارے میں متضاد اطلاعات کے دوران چین نے آج ملائیشیا سے کہا ہیکہ وہ اس بارے میں تمام تفصیلات فراہم کرے تاکہ اس کا پتہ چلانے میں مدد مل سکے۔ اس دوران ایک تکنیکی ماہر نے کہا کہ فون کی گھنٹی بجنے سے اس نتیجہ پر نہیں پہنچا جاسکتا کہ طیارہ محفوظ ہے۔ ای کامرس ٹائمس کے کالم نگار جیف کاگن نے کہا کہ فون کی گھنٹی بجنے کا یہ مطلب نہیں کہ طیارہ محفوظ ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس طیارہ میں سوار مسافرین کے بچنے کے امکانات موہوم ہوچکے ہیں۔
ملائیشیاء کے شہری ہوا بازی سربراہ اظہرالدین عبدالرحمن نے کہا کہ ہندوستان کی مدد سے تمام بین الاقوامی کوششیں جاری ہیں اور اس طیارہ کی تلاش اب انڈومان کے سمندری علاقوں میں کی جارہی ہے۔ امریکی فیڈرل ہوا بازی اتھاریٹی اور امریکی نیشنل ٹاسک فورس سیفٹی بورڈ نے بھی لاپتہ طیارہ کا پتہ چلانے کیلئے تمام مدد کی ہے۔ ملائیشیاء کے وزیردفاع اور کارگذار ٹرانسپورٹ وزیر حسام الدین حسین نے پرہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ لاپتہ طیارہ کی تلاش میں ہم نے کوئی کسر باقی نہیں رکھی۔

TOPPOPULARRECENT