Tuesday , November 21 2017
Home / شہر کی خبریں / ملاوٹی اشیاء عوام کیلئے زہریلی غذائیں ثابت ہورہی ہیں

ملاوٹی اشیاء عوام کیلئے زہریلی غذائیں ثابت ہورہی ہیں

روک تھام کیلئے مہم چلانے کی ضرورت، تلنگانہ سوابھیمان پریشد کی حکومت سے نمائندگی
حیدرآباد۔ 20 مارچ (سیاست نیوز) شہر میں ملاوٹ والی اشیاء عوام کیلئے زہریلی غذائیں ثابت ہورہی ہیں، اسی لئے حکومت کو چاہئے کہ ڈیویژن واری اساس پر ملاوٹ والی اشیاء کے خلاف مہم چلانے کیلئے مراکز کا قیام عمل میں لائے۔ تلنگانہ سوابھیمان پریشد کی جانب سے حکومت سے نمائندگی کرتے ہوئے اِس بات کا مطالبہ کیا گیا کہ ریاست تلنگانہ کو ہر چیز میں ’’رول ماڈل‘‘ بنانے کی کوشش کی جارہی ہے لیکن ملاوٹ والی اشیاء کے معاملے میں حکومت کی جانب سے اختیار کردہ خاموشی عوام کیلئے وبال جان بنی ہوئی ہے۔ مسٹر کے ونئے کشور یادو نے بتایا کہ ریاست میں کئی مقامات پر کھلے عام غذائی اجناس کے علاوہ مسالہ جات اور اشیائے ضروریہ میں ملاوٹ کی جارہی ہے۔ عوام بغیر کسی تحقیق کے اِن اشیاء کا استعمال کرنے پر مجبور ہیں، چونکہ یہی اشیاء بازار میں دستیاب ہیں۔ اس طرح کی اشیاء کو بازار تک پہونچنے سے روکنے کے علاوہ ملاوٹ میں ملوث افراد کے خلاف بڑے پیمانے پر کارروائی کئے جانے کی ضرورت ہے۔ مسٹر ونود ، مسٹر جانسن، مسٹر پربھاکر، مسٹر وویک اور دیگر نے بتایا کہ تلنگانہ سوابھیمان پریشد کی جانب سے گریٹر حیدرآباد کے حدود میں ملاوٹ والی اشیاء کے خلاف بڑے پیمانے پر مہم چلائی جارہی ہے لیکن یہ حکومت کی ذمہ داری ہے کہ وہ عوام کو محفوظ غذاؤں کی فراہمی یقینی بنائیں۔ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کو بھی چاہئے کہ وہ ازخود تمام 150 ڈیویژنس میں ایسے مراکز کا قیام عمل میں لائے جہاں ملاوٹ شدہ اشیاء کی تحقیق یقینی ہو تاکہ کسی بھی شبہ کی بنیاد پر عوام ان مراکز سے رجوع ہوتے ہوئے اشیائے ضروریہ کی تحقیق کرواسکیں اور ملاوٹ شدہ اشیاء کی صورت میں تاجرین کے خلاف شکایت انہیں مراکز پر کی جاسکے۔

TOPPOPULARRECENT