Sunday , July 22 2018
Home / کھیل کی خبریں / ملبورن میں ٹوئنٹی 20 کا فائنل کھیلا جائے گا

ملبورن میں ٹوئنٹی 20 کا فائنل کھیلا جائے گا

 

ملبورن۔30 جنوری (سیاست ڈاٹ کام ) آسٹریلیا کا ملبورن کرکٹ گراؤنڈ (ایم سي جی) پر سال2020 میں ہونے والے آئی سی سی خاتون اور مرد ٹوئنٹی20 ورلڈ کپ کے فائنلس منعقد کیے جائیں گے ۔یہ پہلی مرتبہ ہے جب مرد اور خاتون دونوں زمرے کے ٹورنمنٹ ایک ہی سال کروائے جا رہے ہیں۔آسٹریلیا میں منعقد ہونے والے ورلڈ کپ ٹورنمنٹ کے لئے منتظمین نے یہ اعلان کیا ۔ خواتین کا ٹوئنٹی20 ورلڈ کپ21 فروری سے آٹھ مارچ تک منعقد کیا جائے گا جس میں10 ٹیمیں حصہ لیں گی جبکہ مردوں کا ٹورنامنٹ 18 اکتوبر سے 15 نومبر تک ہوگا جس میں16 ٹیمیں حصہ لیں گی۔خاتون ورلڈ کپ کا فائنل خواتین کے عالمی دن سے شروع ہو گا اور اس وقت بین الاقوامی کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے خواتین کرکٹ کی بڑھتی ہوئی مقبولیت کے ساتھ اس میں بڑی تعداد میں شائقین کے آنے کی امید ظاہر کی ہے ۔اس سے پہلے سال1999 میں امریکہ اور چین کے درمیان پاساڈینا واقع روز باؤل میں ہوئے خواتین فٹ بال ورلڈ کپ فائنل میں 18590 ناظرین پہنچے تھے جو خواتین کے کسی بین الاقوامی ٹورنمنٹ میں اب تک کا ریکارڈ تعداد ہے ۔آسٹریلیا کی خاتون کپتان مینگ لیننگ نے صحافیوں سے کہا کہ میں اس بارے میں سوچ کر ہی بہت حوصلہ افزا محسوس کرتی ہوں کہ ہمیں شاید 90 ہزار سے زیادہ ناظرین کے سامنے کھیلنے کا موقع ملے گا۔آئی سی سی اور کرکٹ آسٹریلیا (سی اے ) نے خاتون پول میچوں کے لیے اسٹیڈیم کا اعلان کیا جن میں پرتھ، ملبورن، سڈنی، برسبین، ایڈیلیڈ اور کینبرا شامل ہیں ۔خاتون ورلڈ کپ کے دونوں سیمی فائنل سڈنی کرکٹ گراؤنڈ میں ہوں گے ۔ہوبارٹ اور گیلونگ میں مردوں کے لیگ مرحلے کے میچ منعقد ہوں گے جبکہ نئے پرتھ اسٹیڈیم سمیت چھ اہم اسٹیڈیم میں مرد ٹورنمنٹ کے میچ کھیلے جائیں گے ۔مرد ٹوئنٹی 20 ورلڈ کپ کا سیمی فائنل سڈنی اور ایڈیلیڈ میں اور فائنل ملبورن میں ہوگا جہاں آسٹریلیائی کرکٹ ٹیم محدود اوور کی شکل میں اپنے مایوس کن ریکارڈ کو بہتر بنانے اترے گی۔آسٹریلیا کی مرد ٹیم نے صرف ایک مرتبہ فائنل میں جگہ بنائی ہے ۔وہ سال 2010 میں ویسٹ انڈیز میں واحد خطابی مقابلے تک پہنچی ہے جبکہ آخری دو سیزنس میں دوسرے راؤنڈ سے ہی باہر ہو گئی ۔آسٹریلیائی ٹیم کے کپتان اسٹیون اسمتھ نے کہا کہ جب ٹوئنٹی 20 کرکٹ ٹیم کا ورلڈ کپ شروع ہوا تب وہ کچھ مختلف تھا لیکن وقت کے ساتھ اس میں وسیع تبدیلی آئی ہے اور اس کی اہمیت بھی بڑھ گئی ہے ۔امید ہے کہ اس مرتبہ ہمیں یہ ٹرافی مل جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT