Sunday , December 17 2017
Home / ہندوستان / ملبوسات کو جی ایس ٹی سے باہر کرنے کا مطالبہ

ملبوسات کو جی ایس ٹی سے باہر کرنے کا مطالبہ

نئی دہلی 20 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) اپوزیشن جماعتوں نے ملک میں اشیا اور خدمات ٹیکس (جی ایس ٹی) نافذ کرنے کے عمل پر آج سوال اٹھایا اور کپڑے کو جی ایس ٹی سے باہر کرنے ، کپڑا کاروباریوں کیساتھ حکومت کے بات چیت کرنے اور اسے نافذ کئے جانے کے طور طریقوں پر راجیہ سبھا میں بحث کرانے کا مطالبہ کیا۔ایوان میں وقفہ صفر کے دوران ترنمول کانگریس کے احمد حسن اور سکھیندر شیکھر رائے ، کانگریس کے احمد پٹیل، راجیو شکلا اور آنند بھاسکر راپول، مارکسی کمیونسٹ پارٹی کے ریتابرت بنرجی اور اناڈی ایم کے کی وجلا ستیہ ناتھ نے جی ایس ٹی کی مخالفت میں کپڑا تاجروں کی ملک کے مختلف حصوں میں جاری ہڑتال کا معاملہ اٹھایا۔مسٹر حسن نے کہا کہ جی ایس ٹی نافذ کئے جانے سے تین دن پہلے ملک کی اہم کپڑا بازار کے کاروباری ہڑتال پر چلے گئے جو اب تک جاری ہے جس سے اب تک معیشت کو 5 ہزار کروڑ روپے کا نقصان ہو چکا ہے ۔ مغربی بنگال میں 5لاکھ سے زائد کپڑا کاروباری ہڑتال پر رہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ سورت کے کاروباری اب بھی ہڑتال پر ہیں۔مسٹر پٹیل نے کہا کہ کپڑا پر جی ایس ٹی کی مخالفت میں تاجر سڑکوں پر اتر آئے ۔ کپڑا تاجروں کو جی ایس ٹی اپنانے کیلئے صرف 27دنوں کا وقت دیا گیا اور پورے سال میں انہیں 36ریٹرن بھرنے پڑینگے۔ انہوں نے کپڑا کاروباریوں کیلئے ایک سال میں زیادہ سے زیادہ 4جی ایس ٹی رٹرن بھرنے کی حد طے کئے جانے کا مطالبہ کیا۔

TOPPOPULARRECENT