Thursday , December 14 2017
Home / شہر کی خبریں / ملت کی صحیح رہنمائی ‘ تعلیمی و معاشی مسائل کے حل میں موثر ثابت ہوگی

ملت کی صحیح رہنمائی ‘ تعلیمی و معاشی مسائل کے حل میں موثر ثابت ہوگی

مصطفی ٹرسٹ کی جانب سے غریب طلبا میں تعلیمی وظائف کی تقسیم ۔ ایڈیٹر سیاست جناب زاہد علی خاں کا خطاب

حیدرآباد۔4ستمبر(سیاست نیوز ) ایڈیٹر سیاست جناب زاہد علی خان نے کہاکہ اخلاص کیساتھ غریب مسلمانوں کی امداد کیلئے شروع کیا جانے والا کام دنیا اور آخرت میں سرخروئی کا ذریعہ ہے۔مسجد قباء گڈس شیڈ نامپلی میں مصطفیٰ ٹرسٹ کی مجانب سے غریب ونادار طلبہ میں تعلیمی وظائف کی تقسیم کے دوران جناب زاہد علی خان نے کہاکہ مسلمان ایک ذہین قوم ہے جس کی صحیح سمت رہنمائی ملت کے تعلیمی اور معاشی مسائل کو حل کرنے میں موثر ثابت ہوگی۔ جناب زاہد علی خان نے کہاکہ مسلمانوں کا شمار دنیا کی ذہین قوموں میں ہوتا ہے مگر معاشی وسائل کی کمی کے سبب آج کے پرآشوب دور میں مسلمان تعلیم کے میدان سے بچھڑتا جار ہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ لڑکوں کے مقابلے لڑکیاںتعلیم کے میدان میں اپنا لواہا منوانے میںکامیاب ہورہی ہیں جبکہ لڑکے غیر ضروری سرگرمیوں میںمتاثر ہوکر تعلیم سے محروم ہوتے جارہے ہیں ۔ جناب زاہد علی خان نے مصطفی ٹرسٹ کی سرگرمیوں پر کہاکہ آج بھی دنیا میںملت اسلامیہ کی ترقی کیلئے تڑپتادل رکھنے والے موجود ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ادارہ سیاست کی جانب سے ملت فنڈ کے تحت 70 تا 80 لاکھ روپئے تعلیمی وظائف کی اجرائی پر خرچ کیا جاتے ہیں جبکہ لاکھوںروپئے ذہین اور ہونہار طلبہ پر خرچ کرکے انہیں بٹس پلانی اور آئی آئی آئی ٹی جیسے اداروں میں داخلہ دلایاجاتا ہے جہاں سے وہ مہارت حاصل کرکے ماہانہ 7 تا 8 لاکھ روپئے کی تنخواہ حاصل کرتے ہیں۔ جناب زاہد علی خان نے کہاکہ ادارہ سیاست نے میٹرک اور انٹرمیڈیٹ میں سرفہرست آنے والے مسلم طلبہ کیلئے ایک تولہ سونے کے سکہ کا اعلان کیا تھا اور مجھے  حیرت ہوئی ہے جس لڑکی نے میٹرک میں ریاست کی ٹاپر کی حیثیت سے گولڈ کا سکہ حاصل کیا اسی لڑکی نے دوسال بعد انٹرمیڈیٹ کے امتحانات میں اسٹیٹ ٹاپر کی حیثیت سے سونے کا سکہ حاصل کیا۔ جناب زاہد علی خان نے مذکورہ لڑکی کی کامیابی کا را ز بیان کرتے ہوئے کہاکہ اُس لڑکی کے گھر میں ٹیلی ویثرن نہیں ہے اور نہ ہی اس نے یا اس کے گھر والوں نے کسی تھیٹر کی صورت دیکھی ہے ۔ ایڈیٹر سیاست نے کہاکہ ٹی وی اور غیر ضروری سرگرمیوں سے دور رہنے والے نوجوان ہی تعلیم کے میدان میں کامیابی سے ہمکنار ہوسکتے ہیں۔ انہو ںنے کہاکہ ایک مسلم نوجوان میں مکمل قرآن شریف حفظ کرنے کی صلاحیت ہوتی ہے تو انداز ہ لگایا جاسکتا ہے کہ مسلم نوجوان کس قدر ذہین ہوتے ہیں۔ جناب زاہد علی خان نے عید گاہ گٹلہ بیگم پیٹ میں جہاں پر وہ ایک عالیشان مسجد تعمیر کروارہے ہیں دینی اور عصری تعلیم کا انتظام کرنے کا منشا بھی ظاہر کیا ۔ انہوں نے شہر حیدرآباد کے قدیم تعلیمی اداروں ‘ تاریخی عمارتوں کے ساتھ حکومتوں کے کھلواڑ پر بھی تشویش ظاہر کی۔ انہوں نے کہاکہ عالیہ اور محبوبیہ اسکول جہاں پر نہ صرف بہتر تعلیمی نظام قائم کیاگیا تھا اور وہا ں کے فارغ التحصیل طلبا نے دنیا میں کامیابی کا جھنڈا لہراکر وطن عزیز کانام روشن کیا ہے مگر آج یہ تعلیمی ادارے بنیادی سہولتوں سے محروم ہیں۔ جناب زاہد علی خان نے قطب شاہی اور آصف جاہی دور کی تعمیرات کو درپیش خدشات پر بھی فکر مندی ظاہر کی۔ انہوں نے کہاکہ حکمران طبقہ قدیم دور میں تعمیر کردہ عالیشان عمارتوں کو بنا کسی مشاورت کے منہدم کرنے کا فیصلہ کرلیتا ہے جو قابلِ افسوس اور تہذیب کیلئے نقصاندہ ہے۔ انہوں نے کہاکہ اصلاح معاشرے بالخصوص سماج کے مسلم طبقے کو تعلیم سے جوڑنے اور انہیں تعلیمی یافتہ بنانے میں مساجد کمیٹی کو آگے آنے کا مشورہ دیا او رکہاکہ تاریخ اس بات کی شاہد ہے کہ مساجد سے اٹھے انقلاب ہمیشہ کامیاب رہے۔ انہوں نے مسجد قباء گڈس شیڈ نامپلی کی کمیٹی کے زیر نگرانی چلائے جارہے مصطفیٰ ٹرسٹ کیلئے ہر ممکن تعاون کا بھی تیقن دیا ۔ قبل ازیں جناب زاہد علی خان کے ہاتھوں غریب او رنادار طلبہ میں تعلیمی وظائف کے چیک تقسیم کئے گئے اس کے علاوہ نوٹ بکس اور راشن کی تقسیم عمل میں آئی ۔ آخر میںصدر کمیٹی جناب شاہد علی خان نے شکریہ ادا کیا۔ صدر مسجد قبا کمیٹی جناب محمد ساجد‘ ڈاکٹر انیس اقبال‘ جناب احمدمحی الدین‘ جناب ایم اے باسط‘ جناب ایم اے رزاق اور دیگر موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT