Tuesday , December 11 2018

ملکاجگری حلقہ سے نرسمہا راؤ کے نواسے کو ٹکٹ

اصل امیدوار کی دستبرداری کے بعد عام آدمی پارٹی کا فیصلہ

اصل امیدوار کی دستبرداری کے بعد عام آدمی پارٹی کا فیصلہ

حیدرآباد 8 اپریل ( پی ٹی آئی ) عام آدمی پارٹی ملکاجگری لوک سبھا حلقہ سے سابق وزیر اعظم پی وی نرسمہا راؤ کے نواسے کو انتخابی میدان میں اتار ر ہی ہے ۔ کہا گیا ہے کہ سدھا کرن ملکاجگری لوک سبھا حلقہ سے عام آدمی پارٹی کے امیدوار ہونگے کیونکہ اس حلقہ سے پارٹی امیدوار چندنا چکرورتی نے مقابلہ سے علیحدگی اختیار کرلی ہے ۔ عام آدمی پارٹی کے ترجمان رمنا اکولا نے کہا کہ چندنا چکرورتی نے شخصی اور صحت کی وجوہات کی بنا پر مقابلہ نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ ہماری فہرست کے دوسرے امیدوار سدھاکرن اب مقابلہ کرینگے ۔ ہم نے ان سے پوچھا کہ آیا وہ مقابلہ کرنے میں دلچسپی رکھتے ہیں تو انہوں نے رضامندی ظاہر کی تھی ۔ سدھا کرن پیشے سے ڈاکٹر ہیں اور وہ کل اپنا پرچہ نامزدگی ملکاجگری لوک سبھا حلقہ سے داخل کرینگے ۔ وہ نرسمہا راؤ کی بڑی دختر شردا وینکٹ کشن راؤ کے فرزند ہیں۔ اس سوال پرکہ انہوں نے کانگریس کی بجائے عام آدمی پارٹی سے مقابلہ کرنے کا فیصلہ کیوں کیا کرن نے کہا کہ وہ عام آدمی پارٹی لیڈر اروند کجریوال سے بہت متاثر ہیں۔ انہوں نے کرپشن کے خلاف انا ہزارے کی تحریک کا قریشی مشاہدہ کیا ہے ۔ ایک ڈاکٹر کی حیثیت سے انہوں نے کئی تنظیموں کے ساتھ بھی کام کیا ہے ۔ ان کا جو نظریہ ہے وہ عام آدمی پارٹی کی تحریک سے مربوط ہے اور اسی لئے وہ عام آدمی پارٹی میں شامل ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان کے نانا نرسمہا راؤ خود بھی عام آدمی تھے ۔ پارٹی کی اولین ترجیح چندنا چکرورتی کے تعلق سے ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ شخصیتیں اہم نہیں ہوتیں۔ اس حلقہ سے موجودہ کانگریس ایم پی و مرکزی وزیر مسٹر سروے ستیہ نارائنا ‘ لوک ستہ کے صدر جئے پرکاش نارائن ‘ سابق ڈی جی پی ( وائی ایس آر کانگریس ) دنیش ریڈی اس حلقے سے مقابلہ کر رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT