Tuesday , October 16 2018
Home / Top Stories / ملک بھر کے اقلیتوں میں احساس عدم تحفظ ، دستور کو خطرہ لاحق

ملک بھر کے اقلیتوں میں احساس عدم تحفظ ، دستور کو خطرہ لاحق

ہمارے لباس ، کھانے پینے ،عبادات پر نظر رکھی جارہی ہے ،گوا کے عیسائی پادری کا لیکچر
پاناجی۔ 5 جون (سیاست ڈاٹ کام) گوا کے پادری نے خط لکھ کر آئین کو خطرہ کی بات کہی ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ بہت سے لوگ عدم تحفظ کے احساس کے ساتھ جی رہے ہیں۔ خط میں فلپ نیری فراؤ نے کہا کہ عوام کو آئین کے اقدار اور تمام مذاہب کی آزادی کی حفاظت کرنی چاہئے۔ فلپ نے گوا اور دمن کے کیتھولک عیسائیوں سے خطاب کیا ہے۔ قبل ذکر ہے کہ گزشتہ مہینہ دہلی کے آرچ بشپ نے بھی آئین پر خطرہ کی بات کہی تھی۔ آرک بشپ نے لکھا کہ ’’آج ہمارا آئین خطرے میں ہے اور اس کی وجہ سے بہت سے لوگ عدم تحفظ کے احساس میں زندگی گذار رہے ہیں، چونکہ عام انتخابات قریب ہیں، ہمیں اپنے دستور کو بچانے اور اس کے اقدار کی حفاظت کے لئے جدوجہد کرنی ہوگی۔ انہوں نے مزید لکھا کہ ان دنوں ملک میں ایک رجحان تیزی سے بڑھ رہا ہے۔ اس کے تحت سماجی اتحاد کا مطالبہ کیا جارہا ہے اور ہمارے کھانے پینے، پہناوے ، رہن سہن اور یہاں تک کہ پرارتھنا پر بھی نظر رکھی جارہی ہے۔ انسانی حقوق اور جمہوریت خطرے میں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اقلیتوں کو اپنے تحفظ کا خطرہ ستا رہا ہے اور ترقی کے نام پر عوام کو ان کے مقامات اور مکانات سے محروم کیا جارہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT