Wednesday , December 13 2017
Home / شہر کی خبریں / ملک میں دیوالی کے موقع پر تاجروں کا دیوالیہ

ملک میں دیوالی کے موقع پر تاجروں کا دیوالیہ

جی ایس ٹی نے ہر ایک کی کمر توڑ دی ، کاروبار ٹھپ ، بے روزگاری میں اضافہ
حیدرآباد۔14اکٹوبر (سیاست نیوز) 2016 میں ملک کا دیوالی کے بعد دیوالیہ نکلا تھا لیکن جاریہ سال ملک کے تاجرین کا دیوالی کی تجارت ٹھپ ہونے کے سبب دیوالی سے قبل ہی دیوالیہ نکلنے لگا ہے۔ ملک بھر میں دیوالی کے کاروبار کے سلسلہ میں تاجرین کا کہناہے کہ قومی سطح پر 30 فیصد تک کاروبار میں رکاوٹ ریکارڈ کی جا رہی ہے اور آئندہ چند یوم کے دوران بھی کوئی تبدیلی کے آثار نظر نہیں آرہے ہیں کیونکہ جی ایس ٹی کے امور قطعیت نہ دیئے جانے کے علاوہ کئی دیگر معاملات جیسے بے روزگاری کی بڑھتی شرح کے سبب دیوالی کے بازار بھی سست ہیں اور ان میں تیزی کے ساتھ تبدیلی رونما ہونے کا کوئی امکان بھی نہیں ہے ۔ ملک کی اہم ریاستوں دہلی ‘ گجرات‘ اترپردیش ‘ کرناٹک‘ تلنگانہ ‘ آندھراپردیش کے علاوہ دیگر مقامات پر تجارتی سروے کے دوران اس بات کا انکشاف ہوا ہے کہ ملک کے شہری علاقوں کے علاوہ دیہی علاقوں میں کاروباری مندی ریکارڈ کی جا رہی ہے اور اس مندی کی بنیادی وجہ عوام کے ہاتھ میں نقد نہ ہونے کے علاوہ جی ایس ٹی سے صنعتی مشکلات میں ہونے والا اضافہ ہے۔ تجارتی برادری کا کہنا ہے کہ گذشتہ دسہرہ کے دوران بازار میں 50فیصد تک کی مندی ریکارڈ کی گئی تھی اور یہ توقع کی جا رہی تھی کہ دیوالی تہوار کی خریداری عروج پر ہوگی لیکن دیوالی کے قریب آنے کے باوجود بھیدیوالی کے بازار میں کوئی گرمی نہیں دیکھی جا رہی ہے اور لوگوں میں خریداری کا رجحان نہیں ہے ۔ کانفڈریشن آف آل انڈیا ٹریڈرس نے اس بات کی توثیق کی گئی ہے کہ دیوالی کی تجارت میں تاحال 30فیصد کی گراوٹ ریکارڈ کی گئی ہے اور آئندہ ایک ہفتہ کے دوران اگر کاروبار کی حالت میں سدھار نہیں آتا ہے تو ایسی صورت میں مزید مندی ریکارڈ کی جا سکتی ہے ۔ دیوالی کے دوران گاہک الکٹرانکس‘ کچن کا سامان‘ گھریلو آسائش کی اشیاء‘ پارچہ جات کے علاوہ تحفہ تحائف خریدا کرتے تھے لیکن ان تمام کا جائزہ لینے پر یہ بات سامنے آ رہی ہے کہ ہندستانی تجارتی برادری کا اس دیوالی پر دیوالیہ نکلنے لگا ہے۔مسٹر بی سی بھارتیہ قومی صدر کانفڈریشن آف آل انڈیا ٹریڈرس اور مسٹر پروین کھانڈیلوال جنرل سیکریٹری نے آج جاری کردہ پریس نوٹ میں بتایا کہ ملک کی معیشت کو مستحکم بنانے میں ملک کی تجارتی برادری کا کلیدی کردار ہوتا ہے لیکن گذشتہ دو تہواروں کے دوران کاروباری مندی نے تجارتی برادری کو کافی نقصان پہنچایا ہے ۔ کانفڈریشن کے ذمہ داروں کا کہناہے کہ ملک میں جی ایس ٹی کے علاوہ دیگر امور نے بھی تجارتی کا کافی نقصان پہنچایا ہے جن میں آن لائن خریداری بھی شامل ہے۔ ای۔کامرس کو حاصل مراعات کے سبب شہری علاقو ںمیں تجارت کو بھاری نقصان کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اور لوگ ٹیکس سے بچنے کیلئے آن لائن خریداری کی جانب سے توجہ مبذول کر رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT