ملک میں سیکولرازم کو سنگین خطرہ‘ترقی کا خواب ادھورا

بھینسہ۔20مئی ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ریاستی و مرکزی حکومت اقتدار پر فائز ہوکر ایک سال کا عرصہ گذر چکا ہے لیکن اس ایک سالہ دور حکومت میں ریاستی و مرکزی حکومت تمام محاذ پر ناکام ہوچکی ہے ۔ ہندوستان کے وزیراعظم نریندر مودی نے سب کی ترقی کا ساتھ ‘ امن اور انصاف اور اچھے دن جیسے نعروں کو بلند کرتے ہوئے ملک میں خوشحالی لانے کا عوام سے وعدہ کیا

بھینسہ۔20مئی ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ریاستی و مرکزی حکومت اقتدار پر فائز ہوکر ایک سال کا عرصہ گذر چکا ہے لیکن اس ایک سالہ دور حکومت میں ریاستی و مرکزی حکومت تمام محاذ پر ناکام ہوچکی ہے ۔ ہندوستان کے وزیراعظم نریندر مودی نے سب کی ترقی کا ساتھ ‘ امن اور انصاف اور اچھے دن جیسے نعروں کو بلند کرتے ہوئے ملک میں خوشحالی لانے کا عوام سے وعدہ کیا تھا لیکن مرکزی حکومت ان نعروں کو برعکس چل رہی ہے اور ملک میں فرقہ واریت کو کھلی چھوٹ دے رکھی ہے جس کی وجہ سے ملک کا سیکولرازم خطرہ میں ہے ۔ان خیالات کا اظہار ویلفیر پارٹی آف انڈیا کے ریاستی صدر سید شفیع اللہ قادری نے ملک گیر مہم غریب بچاؤ‘ دیش بچاؤ‘ کے تحت بھینسہ میں منعقدکردہ جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے مرکزی حکومت عوامی اسکیمات پر سبسیڈیز ختم کر کے ملک کے کارپوریٹ اداروں کو ہزاروں کروڑوں کی سبسیڈی فراہم کرر ہی ہے ‘ جس میں پکوان گیاس بھی موجود ہے ۔ جس سے ملک کے غریب عوام پر مہنگائی کا مزید بوجھ بڑھ گیا ہے ۔ مرکزی حکومت کی تمام پالیسیاں صرف اور صرف کارپوریشن کمپنیوں کی تائید اور کسانوں کے مخالف ہے ۔بار بار فرقہ وارانہ بیان بازی کرتے ہوئے گھر واپسی اور مسلمانوں کو ووٹ سے محروم کرنے کی متعلق بیانات پیش کررہے ہیں جس کی وجہ سے ملک کا سیکولرازم سنگین خطرہ میں ہے ۔ اس ایک سالہ دور حکومت میں ملک کا غریب طبقہ اور عریب ہوتا جارہا ہے اور امیر طبقہ امیر ہوتا جارہا ہے ۔ ملک کے وزیراعظم اس ایک سال میں اکثر بیرون ممالک کے دوروں میں گزارا ہے ۔ جس کی وجہ سے ملک کی ترقی کا خواب ادھوا ہے ۔ تلنگانہ حکومت مسلمانوں کو 12فیصد تحفظات اور وقف جائیدادوں کے تحفظ میں کوتاہی کررہی ہے جس کی وجہ سے کروڑوں روپیوں کی وقف املاک پر ناجائز قابضین قبضہ کئے ہوئے ہیں ۔

اوقاف کی جائیداد کے تحفظ کیلئے ویلفیر پارٹی آگے بڑھ کر حیدرآباد کی ٹولی مسجد اور کریم نگر کی مسجد سے منسلک ناجائز قابضین کو برخواست کرنے کیلئے نمائندگی کررہی ہے ۔ تلنگانہ حکومت جلد از جلد حالیہ آلیر انکاؤنٹر کی جوڈیشیل تحقیقات کرواتے ہوئے خاطی پولیس ملازمین کو برطرف کرے ۔ ویلفیر پارٹی ریاستی صدر نے کہا کہ ریاستی حکومت پولیس کو اس طرح کے اختیارات دے کر اس ریاست کو پولیس اسٹیٹ میں تبدیل کرنا چاہتی ہے ؟ ۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ تحریک میں تمام شعبوں کے ملازمین نے اپنا رول ادا کرتے ہوئے احتجاج اور ہڑتالیں منظم کی جس کی بنیاد پر یہ علحدہ ریاست حاصل ہوئی ہے۔ ریاستی صدر ویلفیر پارٹی نے بھینسہ شہر کے حالات کا جائزہ لیتے ہوئے حکومت سے مخاطب ہوکر کہا کہ بھینسہ شہر میں گذشتہ سال پیش آئے ماسٹر پلان کے دوران چکن مارکٹ ‘ مچھلی مارکٹ اور ترکاری مارکٹ کے غریب مزدوروں کا کافی نقصان ہوا ہے جس کی وجہ سے غریب مزدور بے روزگاری میں مبتلا ہوچکے ہیں ۔ حکومت جلد سے جلد ماسٹر پلان زدگان کو مناسب اراضی مختص کرتے ہوئے روزگاری کے موقع فراہم کریں ۔ ریاستی صدر ویلفیر پارٹی نے بھینسہ شہر میں محکمہ پولیس کی جانب سے رات 9بجے مارکٹ بند کئے جانے پر حکومت سے مطالبہ کیا کہ دیگر مقامات کی طرح بھینسہ شہر میں کے مارکٹ کو وقف دیا جائے اور جلد بند کروائے ۔ انہوں نے اس بارے میں اعلیٰ پولیس عہدیداران سے پارٹی کی جانب سے نمائندگی کرنے کا ارادہ ظاہر کیا ۔ قبل ازیں قاسم رضوی حیدرآباد وسیم احمد نائب صدر شفیع اللہ خان ضلعی صدر کے علاوہ انور خان نظام آباد‘ ظہیر پٹھان ناندیڑ اور دیگر مقررین نے خطاب کیا اور بھینسہ ٹاؤن صدر ویلفیر پارٹی محمد سعید احمد ایڈوکیٹ نے بھینسہ کی عوام سے پارٹی سے جڑکر بنیادی طور پر مضبوط کرنے اور شہر میں ترقیاتی ‘ تعلیمی مسائل کی یکسوئی کو کامیاب بنانے کیلئے مقامی قائدین سے نمائندگی اور ربط پیدا کرنے کی گذارش کی ۔ اس موقع پر بھینسہ نائب صدر خواجہ الیاس احمد ‘ جنرل سکریٹری عبدالجبار بنارسی ‘ جوائنٹ سکریٹری عبدالرزاق ‘ عبدلابراہیم ‘ خازن عبدالجاوید موجود تھے ۔ اس جلسہ کی نظامت کے فرائض مرزا قاسم بیگ الیاس نے انجام دی ۔ اس جلسہ میں شہر کے عوام کی کثیر تعداد موجود تھی ۔

TOPPOPULARRECENT