Thursday , December 14 2017
Home / سیاسیات / ملک میں غیرمعلنہ ایمرجنسی : دیوے گوڑا

ملک میں غیرمعلنہ ایمرجنسی : دیوے گوڑا

ہاسن (کرناٹک )۔ 25اکتوبر (سیاست ڈاٹ کام) سابق وزیراعظم و جنتادل سیکولر کے سربراہ ایچ ڈی دیوے گوڑا نے تمام اداروں کو اپنے کنٹرول میں لینے اور ملک میں غیرمعلنہ ایمرجنسی جیسی صورتحال پیدا کرنے پر وزیراعظم نریندر مودی پر برہمی کا اظہار کیا۔انہوں نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے الزام لگایا کہ مودی نے گجرات کیڈر کے ایک افسرکو الیکشن کمیشن نے لایا اور تقریباً تمام اداروں بشمول سی بی آئی اور ریزروبینک آف انڈیا کے سربراہوں کا تعلق بھی اسی ریاست سے ہے ۔وزیراعظم نے تین مرتبہ گجرات کا دورہ کرتے ہوئے ہزارہا کروڑ روپے کے پیکیج کا اعلان کیا۔پاٹیدار تحریک کے لیڈر اور ہاردک پٹیل کے ا یک قریبی ساتھی کا کہنا ہے کہ بی جے پی میں شامل ہونے کے لئے انہیں ایک کروڑ روپے کی پیشکش کی گئی تھی۔بی جے پی کرناٹک میں آپریشن لوٹس کی بھی بانی ہے اور اب ایسا محسوس ہوتا ہے بی ایس یدی یورپا نے گجرات میں بھی اس پر عمل کرنے کے لئے پارٹی کے صدر امیت شاہ کو یہ بات سکھائی ہے ۔ انہو ں نے کہا کہ 12سال تک مودی گجرات کے وزیراعلی رہے ۔اتنے طویل عرصہ تک ریاست میں حکمرانی کے باوجود انہوں نے حال ہی میں کہا کہ یو پی اے کی حکومت کے دوران گجرات کی ترقی کی انہیں اجازت نہیں دی گئی تھی۔ وزیراعظم کا عہدہ سنبھالے ہوئے انہیں چار سال ہوئے ہیں۔بی جے پی ہی ریاست میں حکومت کررہی ہے تو پھر ان برسوں میں ریاست کو ترقی کیوں نہیں دی گئی حالانکہ مرکز اور ریاست دونوں میں بی جے پی کی حکومت ہے ۔ گجرات اور ہماچل پردیش میں بی جے پی کی شاندار کامیابی کے سروے سے متعلق دیوے گوڑا نے کہا کہ اطلاعات کے مطابق کانگریس اور بی جے پی میں کانٹے کا مقابلہ ہوگا ۔جے ڈی ایس لیڈر نے کہا کہ نوٹ بندی کے خلاف 8نومبر کو ان کی پارٹی احتجاج کرے گی۔ جی ایس ٹی پر عمل سے متعلق انہوں نے کہا کہ حکومت جی ایس ٹی میں کئی تبدیلیاں لارہی ہے ۔ مجھے یہ سمجھ میں نہیں آتا کہ گجرات میں انتخابات سے پہلے کتنی تبدیلیاں لائی جائیں گی۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT