Saturday , November 17 2018
Home / شہر کی خبریں / ملک کے خزانہ کو بیرونی زر مبادلہ سے بھرنے میں مسلم تارکین وطن کا اہم کردار

ملک کے خزانہ کو بیرونی زر مبادلہ سے بھرنے میں مسلم تارکین وطن کا اہم کردار

6 برسوں کے دوران خلیج میں 24570 ہندوستانی ورکروں کی موت
حیدرآباد ۔ 6 ۔ نومبر : ( سیاست نیوز ) : عرب ممالک کو روزگار کی تلاش میں جانے والے ہندوستانی باشندوں کے مسائل اور پریشانیاں غیر معمولی ہیں جو لوگ ہندوستان سے روزگار کی تلاش میں عرب ممالک جاتے ہیں وہ محنت مزدوری کے ذریعہ حاصل ہونے والی رقم اپنے ملک روانہ کرتے ہیں اور ان میں سے اکثر لوگ صحت کے مختلف مسائل میں مبتلا ہو کر وہیں انتقال کر جاتے ہیں یہاں تک ان ہی ممالک میں دفن بھی کردئیے جارہے ہیں ۔ گذشتہ دو برس کے اندر گلف ممالک میں روزانہ 10 ہندوستانی باشندے انتقال کرچکے ہیں ۔ اس بات کا انکشاف ایک این جی او کی جانب سے کیا گیا ہے جس نے قانون حق معلومات کے تحت وزارت خارجہ سے گلف ممالک میں مرنے والے ہندوستانی باشندوں کی تفصیلات کی فراہمی سے متعلق درخواستیں دائر کی تھی ۔ عرب ممالک سے بھارت کو 7300 کروڑ ( 100 کروڑ امریکی ڈالر ) روانہ کرنے والوں میں سے 117 افراد روزانہ فوت ہورہے ہیں ۔ دولت مشترکہ حقوق انسانی نامی این جی او کے نمائندے وینکٹیش نائک نے قانون حق معلومات کے تحت حاصل کردہ تفصیلات میڈیا کو جاری کیے ہیں ۔ یکم جنوری 2012 سے جون 2018 تک بحرین ، کویت ، قطر ، سعودی عرب ، عمان ، متحدہ عرب امارات ( یو اے ای ) ان 6 عرب ممالک میں بھارتی باشندوں کی اموات سے متعلق تفصیلات فراہم کرنے کی درخواست کرتے ہوئے وزارت خارجہ اور سفارت خانوں کو آر ٹی آئی (رائٹ ٹو انفارمیشن ایکٹ ) کے تحت وینکٹیش نائک نے درخواست داخل کی تھی ۔ فراہم کردہ تفصیلات کے مطابق گلف ممالک میں 2012-18 کے درمیان 24,570 بھارتی باشندے انتقال کر گئے ہیں اور اگر یو اے ای و کویت کی جانب سے تمام تفصیلات فراہم کی جائیں تو اس تعداد میں مزید اضافہ ہوسکتا ہے ۔ تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق روزانہ عرب ممالک میں 10 بھارتی باشندے انتقال کرتے جارہے ہیں ۔ 2012-17 کے درمیان ہندوستان کو 40 ہزار کروڑ ڈالر سے زائد کی بھاری رقم بیرون ممالک سے آئی ہے ۔ جب کہ صرف عرب ممالک سے 20 ہزار کروڑ ڈالر پر مشتمل رقم ہندوستان آئی ہے این جی او کے نمائندے وینکٹیش نائک نے مطالبہ کیا کہ ان اموات پر انکوائری کرائی جائے ۔ واضح ہو کہ مذکورہ عرب ممالک کو ہندوستانی مسلمان بھاری تعداد میں خصوصا شہر حیدرآباد سے تعلق رکھنے والے روزگار کی تلاش میں جاتے ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT