Wednesday , August 22 2018
Home / ہندوستان / ملیالم اداکارہ کو عدالتی راحت ، فوجداری کارروائی پر حکم التواء

ملیالم اداکارہ کو عدالتی راحت ، فوجداری کارروائی پر حکم التواء

نئی دہلی ۔ 21 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) ملیالم اداکارہ پریہ پرکاش وریئر کو سپریم کورٹ سے آج راحت حاصل ہوئی جو اپنا ایک ’’ونک‘‘ ویڈیو وائرل ہوجانے کے بعد سنسنی خیز انداز میں منظرعام پر آتے ہوئے مصیبتوں میں پھنس گئی تھی۔ عدالت عظمیٰ نے بعض ریاستوں میں اس کے خلاف جاری فوجداری کارروائیوں پر حکم التواء جاری کردیا۔ قبل ازیں اس اداکارہ کے خلاف اس بنیاد پر مقدمہ درج کیا گیا تھا کہ اس کی ایک فلم نغمہ سے مسلم برادری کے مذہبی جذبات مجروح ہوئے ہیں۔ جسٹس دیپک مصرا، جسٹس اے ایم کھانویلکر اور جسٹس ڈی وائی چندراچوڑ پر مشتمل ایک بنچ نے اس ملیالم فلم ’’اورو ادار لو‘‘ کے ڈائرکٹر کو بھی ایسی ہی راحت دی ہے۔ اس بنچ نے تمام ریاستی حکومتوں کو اس فلم کی ترویج کیلئے جاری کردہ ویڈیو کے ضمن میں اداکارہ اور ڈائرکٹر کے خلاف مزید ایف آئی آر درج کرنے پہلے درج کردہ فوجداری مقدمات پر مزید کسی کارروائی سے روک دیا ہے۔ بنچ نے اس درخواست پر حکومت تلنگانہ اور دوسروں کو نوٹس جاری کی ہے جو 18 سالہ اداکارہ پریہ پرکاش ورائیر نے انٹرنیٹ پر اپنا ویڈیو دائر ہوجانے کے بعد غیرمعمولی شہرت حاصل کی تھی۔

TOPPOPULARRECENT