Monday , May 21 2018
Home / ہندوستان / ملیا کو وطن لانے کے اخراجات بتانے سے سی بی آئی کا گریز

ملیا کو وطن لانے کے اخراجات بتانے سے سی بی آئی کا گریز

نئی دہلی 20 فبروری ( سیاست ڈاٹ کام ) سی بی آئی نے مطلوب تاجر للت مودی اور وجئے ملیا کو وطن واپس لانے کی کوششوں پر ہوئے اخراجات کی تفصیل بتانے سے گریز کیا ہے اور کہا کہ اس اطلاع کو آر ٹی آئی قانون کے تحت استثنی حاصل ہے ۔ پونے سے تعلق رکھنے والے آر ٹی آئی کارکن وہار دھروے نے سی بی آئی سے رجوع ہوتے ہوئے ملیا اور للت مودی کو وطن واپس لانے کی کوششوں پر ہوئے اخراجات کی تفصیل بتانے کو کہا تھا ۔ وجئے ملیا ہندوستانی بینکوں کو 9000 کروڑ سے زائد کے قرض واجب الادا ہیں جبکہ للت مودی پر منی لانڈرنگ کے الزامات ہیں۔ وجئے ملیا اور للت مودی دونوں نے کسی غلط کاری کی تردید کی ہے ۔ وجئے ملیا مارچ 2016 میں ہندوستان سے فرار ہوگئے تھے جبکہ سی بی آئی نے ان کے خلاف جاری کردہ لک آوٹ نوٹس کی سطح کو کم کردیا تھا ۔ سی بی آئی نے اپنی ٹیم کو کئی مرتبہ لندن بھیجا تھا تاکہ ان کے خلاف اخراج کے مقدمہ کی پیروی کی جاسکے ۔ آر ٹی آئی درخواست کو وزارت فینانس نے سی بی آئی سے رجوع کیا تھا ۔ ایجنسی نے اسے ایس آئی ٹی کے حوالے کیا ۔ سی بی آئی کا کہنا ہے کہ حکومت کی جانب سے جاری کردہ ایک اعلامیہ کی رو سے اسے یہ اطلاع فراہم کرنے سے استثنی حاصل ہے ۔

TOPPOPULARRECENT