Wednesday , July 18 2018
Home / ہندوستان / ملیا کے قرضوں کا ریکاڈ نہیں ہے : وزارت فینانس

ملیا کے قرضوں کا ریکاڈ نہیں ہے : وزارت فینانس

نئی دہلی ۔ 7 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) وزارت فینانس نے سنٹرل انفارمیشن کمیشن (سی آئی سی) سے آج کہا کہ صنعتکار وجئے ملیا کو دیئے گئے قرضوں کے بارے میں اس کے پاس کوئی معلومات نہیں ہیں جس پر سی آئی سی نے کہا کہ اس کا جواب مبہم ہے جو قانون کے مطابق قابل قبول نہیں ہے۔ چیف انفارمیشن کمشنر آر کے ماتھر نے اس ضمن میں راجیو کمار کھارے کی درخواست پر سماعت کرتے ہوئے وزارت فینانس کے عہدیدار سے کہا کہ حق معلومات سے متعلق درخواست گذار کی طرف سے پیش کردہ یہ درخواست مناسب متعلقہ اتھاریٹی سے رجوع کی جائے۔ وزارت فینانس نے اگرچہ دعویٰ کیا ہیکہ ملیا کو مختلف بینکوں کی طرف سے دیئے گئے قرض کے بارے میں اس کے پاس معلومات یا پھر ضمانت دینے والوں کی تفصیلات موجود نہیں ہیں، لیکن ماضی میں وزارت فینانس اس ضمنمیں پارلیمنٹ میں اٹھائے گئے مختلف سوالات کا جواب دی ہے۔ مملکتی وزیرفینانس سنتوش گنگوار نے 17 مارچ 2017ء کو ملیا کے بارے میں ایک سوال پر جواب دیا تھا کہ وہ شخص جس کا نام (ملیا) بیان کیا گیا ہے، اس کو ستمبر 2004ء میں قرض دیا گیا تھا اور فروری 2008ء میں اس کا دوبارہ جائزہ لیا گیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT