Thursday , June 21 2018
Home / Top Stories / ممبئی حملوں کا سازشی لکھوی جیل سے رہا

ممبئی حملوں کا سازشی لکھوی جیل سے رہا

اسلام آباد ؍ لاہور ، 10 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان کی سخت مخالفت کے باوجود 2008ء کے ممبئی حملے کے سرغنہ اور لشکر طیبہ کے آپریشنس کمانڈر ذکی الرحمن لکھوی آج بروز جمعہ ضمانت پر جیل سے باہر نکل آئے۔ 55 سالہ لکھوی کو راولپنڈی کی ادیالا جیل سے رہائی مل گئی جبکہ اُس نے اپنی آزادی کیلئے ایک ، ایک ملین روپے مالیت کے دو ضمانتی مچلکے پیش کردیئے

اسلام آباد ؍ لاہور ، 10 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان کی سخت مخالفت کے باوجود 2008ء کے ممبئی حملے کے سرغنہ اور لشکر طیبہ کے آپریشنس کمانڈر ذکی الرحمن لکھوی آج بروز جمعہ ضمانت پر جیل سے باہر نکل آئے۔ 55 سالہ لکھوی کو راولپنڈی کی ادیالا جیل سے رہائی مل گئی جبکہ اُس نے اپنی آزادی کیلئے ایک ، ایک ملین روپے مالیت کے دو ضمانتی مچلکے پیش کردیئے۔ حافظ سعید کی ممنوعہ تنظیم جماعت الدعوہ کے نمائندے جیل کے باہر لکھوی کے استقبال کیلئے موجود تھے۔ (رہائی پر ہندوستانی ردعمل سے متعلق خبریں اندرونی صفحات پر)۔ لکھوی کو جس نے ممبئی حملے کے دوران لشکر طیبہ کے بندوق برداروں کو کنٹرول روم سے ہدایات جاری کئے تھے، پاکستانی عدالت کے حکمنامہ کے ایک روز بعد چھ سالہ قید سے رہائی مل گئی۔ لکھوی جسے تقریباً 60 گھنٹے طویل محاصرہ کا کلیدی سازشی سمجھا جاتا ہے، آج جیسے ہی باہر آیا، اپنی کار میں بیٹھ کر اسلام آباد کی اپنی قیامگاہ کیلئے روانہ ہو گیا۔ جماعت الدعوۃ کے ترجمان یحییٰ مجاہد نے ربط پیدا کرنے پر لکھوی کی رہائی کے بارے میں کسی تبصرے سے انکار کردیا۔ لکھوی اور دیگر 6 افراد پر 2008ء کے ممبئی حملے کی سازش تیار کرنے اور اس پر عمل آوری کا الزام عائد ہے۔ اس حملے میں 166 افراد ہلاک اور 300 سے زیادہ زخمی ہوئے تھے۔

پاکستان سے لکھوی کی رہائی پر ہندوستان کا شدید احتجاج
اسلام آباد ؍ پیرس ۔ 10 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان نے آج ذکی الرحمن لکھوی کی رہائی پر پاکستان سے سخت احتجاج درج کروایا۔ وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ ہندوستانی ہائی کمشنر نے ہندوستان کی جانب سے سنگین اندیشوں کا معتمد خارجہ پاکستان سے ملاقات کے دوران اندراج کروایا ہے کیونکہ ممبئی 2008ء دہشت گرد حملوں کے ملزم ذکی الرحمن لکھوی کو رہا کردیا گیا ہے۔ پیرس سے موصولہ اطلاع کے بموجب ممبئی حملوں کے کلیدی سازشی ذکی الرحمن لکھوی کی پاکستانی جیل سے رہائی کو بدبختانہ قرار دیتے ہوئے فرانس نے آج کہا کہ یہ تبدیلی ہندوستان اور دنیا دونوں کیلئے بھی کوئی اچھی علامت نہیں ہے۔ یہ مسئلہ اس وقت منظرعام پر آیا جبکہ وزیراعظم نریندر مودی نے فرانسیسی ارکان مقننہ کے ایک وفد سے ملاقات کی ، جس کی قیادت قومی اسمبلی کی صدر کلاڈمارٹولون کررہی تھیں۔ فرانسیسی وفد کے ایک رکن نے لکھوی کی رہائی کو بدبختانہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ دنیا اور ہندوستان دونوں کیلئے کوئی اچھی خبر نہیں ہے۔ فرانس نے ہندوستان کے ساتھ اس سلسلہ میں یکجہتی ظاہر کی ۔ لشکرطیبہ کی کارروائیوں کے کمانڈر لکھوی کو پاکستان کی جیل سے 6 سال کی قید کے بعد رہا کیا گیا ہے۔ لکھوی کی رہائی کا مسئلہ حال ہی میں انسداد دہشت گردی کارروائیوں کے سلسلہ میں موضوع گفتگو بن گیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT