Sunday , November 19 2017
Home / ہندوستان / ممبئی سلسلہ وار دھماکے کیس کی سماعت پر التواء درخواست

ممبئی سلسلہ وار دھماکے کیس کی سماعت پر التواء درخواست

ممبئی13 جون(سیاست ڈاٹ کام) ممبئی سلسلہ وار بم دھماکوں میں مبینہ طور پر استعمال شدہ چوری کی ہوئی دو موٹر سائیکلوں کے معاملے کی سماعت کررہی ممبئی کی سیوڑی مجسٹریٹ عدالت نے گذشتہ ماہ استغاثہ کی عرضداشت پر معاملے کی سماعت پر فوری طور پر روک لگانے کے احکامات جاری کئے تھے جس کے بعد سیوڑی عدالت کے فیصلہ کو ممبئی سیشن عدالت میں چیلنج کیا گیا تھا جس کی سماعت کے دوران سیشن عدالت نے نچلی عدالت کے فیصلہ کو برقرار رکھتے ہوئے معاملے کی سماعت پر جاری اسٹے کو درست ٹھہرایا۔موصلہ اطلاعات کے مطابق اس معاملے کا سامناکررہے ملزمین نقی احمد وسعی احمد شیخ اور ندیم اختر اشفاق شیخ کو قانونی امداد فراہم کرنے والی تنظیم جمعیت علمامہاراشٹر (ارشد مدنی) قانونی امداد کمیٹی کے سربراہ گلزار اعظمی نے بتایا کہ سیوڑی عدالت کے مجسٹریٹ سی وی مہاترے کے روبرو معاملے کی سماعت جاری تھی اور سرکاری گواہوں کے بیانات کا اندارج جاری تھا لیکن دفاعی وکیل ایڈوکیٹ عبدالوہاب خان نے سرکاری گواہان سے دوران جرح ایسے سوالات پوچھے جس کا ان کے پاس کوئی جواب نہیں تھا اور وہ اپنے سابقہ بیانات سے منحرف ہوتے نظر آرہے تھے اسے دیکھتے ہوئے سرکاری وکیل نے مکوکا قانون کی دفعہ10 کا حوالہ دیتے ہوئے عدالت سے گذارش کی تھی کہ وہ معاملے کی سماعت کو فوراً روکے کیونکہ اسی مقدمہ سے منسلک 13/7 ممبئی سلسلہ وار بم دھماکہ معاملے میں اس کا اثر پڑے گا۔گلزار اعظمی نے کہا کہ سرکاری گواہوں کو یکے بعد دیگر ٹوٹتادیکھتے ہوئے سرکاری وکیل نے مکوکا قانون کی دفعہ 10کا بہانہ بناکر معاملے کو روک دیا جبکہ ابھی 13/7 سلسلہ واربم دھماکہ معاملے کی سماعت شروع بھی نہیں ہوئی ہے –
حکومت نئی صنعتی پالیسی کو قطعیت دینے کوشاں
نئی دہلی 13 جون ( سیاست ڈاٹ کام ) حکومت نئی صنعتی پالیسی کی تیاری میں مصروف ہے تاکہ ٹکنالوجی ‘ اختراعی اور مسابقت بڑھانے والی اشیا کو فروغ دینے میں مدد مل سکے ۔ ایک سینئر عہدیدار نے کہا کہ چونکہ ملک میں مینوفیکچرنگ شعبہ کی صورتحال بدلتی جا رہی ہے ایسے میں نئی ٹکنالوجی متعارف کروانے ‘ نئی اختراعات کو آگے بڑھانے اور خود کار انداز اختیار کرنے کی سمت غور کرنے کی ضرورت ہے ۔ ایسے میں 1991 میں جو صنعتی پالیسی تیار کی گئی تھی اس کو پوری طرح سے تبدیل کرنا ہوگا اور ہم اس سلسلہ میں کوشش کر رہے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ نئی پالیسی میں تخلیقی صلاحیتوں کی حوصلہ افزائی کرنے ‘ ٹیکس نظام کو مزید سہل اور آسان بنانے اور نئے چیلنجس سے نمٹ نے کی کوششوں پر خاص توجہ دی جائے گی ۔

 

TOPPOPULARRECENT