ممبئی میں گرفتار سابق روڈی شیٹر کی حیدرآباد کو منتقلی

مجرمین کی ٹولی سے پستول کی خریدی پر مادنا پیٹ میں پولیس کا دھاوا ، گھر کی تلاشی
حیدرآباد ۔ /13 مئی (سیاست نیوز) ممبئی پولیس کی کرائم برانچ ٹیم نے آج علاقہ مادناپیٹ بھرت نگر میں سابق روڈی شیٹر وحید خان کے مکان پر اچانک دھاوا کیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ وحید خان کو کرائم برانچ کے اسسٹنٹ سب انسپکٹر سشیل کمار کی نگرانی میں حیدرآباد لایا گیا تھا اور اس کے مکان میں دو گھنٹے تک تلاشی لی گئی ۔ ذرائع نے بتایا کہ سابق روڈی شیٹر وحید خان نے ممبئی کی ایک مجرمین کی ٹولی سے دیسی ساختہ پستول خریدا اور وہ کارتوس بھی حاصل کرنے کی کوشش کررہا تھا کہ اسے ممبئی پولیس نے گزشتہ ہفتہ گرفتار کرلیا ۔ باوثوق ذرائع نے بتایا کہ وحید خاں نے پولیس تفتیش میں یہ بتایا کہ یہ دیسی ساختہ پستول اور کارتوس خریدکر شہر حیدرآباد منتقل کرنے کا منصوبہ رکھتا تھا ۔ اس انکشاف کے بعد ممبئی پولیس نے وحید خان کو تین دن کی پولیس تحویل میں دیکر اسے شہر منتقل کیا گیا اور مادناپیٹ پولیس کی مدد سے اس کے مکان کی تلاشی لی گئی ۔ حالانکہ پولیس کو اس کے مکان سے کوئی ہتھیار یا شئے برآمد نہیں ہوئی ۔بتایا جاتا ہے کہ سال 2010 ء میں علاقہ مادناپیٹ میں پیش آئے فرقہ وارانہ وارداتوں میں ملوث ہونے کے نتیجہ اس کے خلاف 10 مقدمات درج کئے گئے تھے بعد ازاں ان مقدمات کی تحقیقات کو سی سی ایس کی اسپیشل انوسٹی گیشن ٹیم (ایس آئی ٹی ) کے حوالے کردیا گیا ۔ روڈی شیٹر وحید خان ایک مقامی جماعت کے رکن اسمبلی کا حامی بن گیا تھا جس کے نتیجہ میں اس کی سیاسی سرپرستی کے نتیجہ میں سال 2015 ء میں اس کی روڈی شیٹ بند کردی گئی تھی ۔ سابق روڈی شیٹر اکثر ممبئی کو آیا جایا کرتا تھا اور اس نے دیسی ساختہ پستول خریدی تھی ۔ ممبئی پولیس کی کرائم برانچ یہ پتہ لگانے کی کوشش کررہی ہے کہ ہتھیار خریدنے کے بعد وہ اس کے خلاف استعمال کرنے والا تھا یا یہ ہتھیار اس کے حوالے کرنے والا تھا ۔ انسپکٹر مادناپیٹ مسٹر ڈی ناگیش نے بتایا کہ وحید خان کے مکان پر تلاشی کے بعد اسے فوری ممبئی واپس لے جایا گیا ۔

TOPPOPULARRECENT