Monday , June 18 2018
Home / پاکستان / ممبئی کیس: ویڈیو لنک ٹرائل کی مخالفت

ممبئی کیس: ویڈیو لنک ٹرائل کی مخالفت

لاہور ۔ 17 ۔ ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) ممبئی میں پیش آئے 2008 ء کے حملوں کے کیس میں وکلائے صفائی نے آج انسداد دہشت گردی کی پاکستانی عدالت کے روبرو ایسی عرضی کی مخالفت کی کہ 7 ملزمین کا ٹرائل ویڈیو لنک کے ذریعہ منعقد کیا جائے یا گواہوں کو اپنے قلمبند بیانات داخل کرنے کی اجازت دی جائے ۔ گزشتہ سماعت میں استغاثہ کے وکلاء نے انسداد دہشت گردی عدالت

لاہور ۔ 17 ۔ ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) ممبئی میں پیش آئے 2008 ء کے حملوں کے کیس میں وکلائے صفائی نے آج انسداد دہشت گردی کی پاکستانی عدالت کے روبرو ایسی عرضی کی مخالفت کی کہ 7 ملزمین کا ٹرائل ویڈیو لنک کے ذریعہ منعقد کیا جائے یا گواہوں کو اپنے قلمبند بیانات داخل کرنے کی اجازت دی جائے ۔ گزشتہ سماعت میں استغاثہ کے وکلاء نے انسداد دہشت گردی عدالت راولپنڈی میں ایک درخواست پیش کرتے ہوئے استدعا کی تھی کہ انہیں ملزمین پر جرح ویڈیو لنک کے ذریعہ منعقد کرنے یا گواہوں کو اپنے بیانات سی ڈی میں ریکارڈ کر کے عدالت میں پیش کرنے کی اجازت دی جائے۔ استغاثہ کے وکلاء نے اپنی درخواست میں کہا تھا کہ چونکہ گواہوں کیلئے سیکوریٹی وجوہات کی بناء عدالت کے روبرو حاضر ہونا مشکل ہے اس لئے عدالت کو یہ ٹرائل ویڈیو لنک کے ذریعہ منعقد کرنا چاہئے یا پھر گواہوں کو اپنے ریکارڈ شدہ بیانات پیش کرنے کی اجازت دیں۔ انہوں نے کہا کہ 7 ملزمین جو راولپنڈی کی ادیالہ جیل میں بند ہے، انہیں بھی اس کارروائی کا حصہ بنایا جانا چاہئے۔ وکلائے صفائی نے آج عدالت میں تحریری جواب داخل کرتے ہوئے استغاثہ کے وکلاء کی عرضی سے عدم اتفاق کرتے ہوئے اس کی مخالفت کی۔وکلائے صفائی نے اپنے جواب میں کہا کہ یہ حساس اور کیمرے کی نظروں کے سامنے منعقد ہونے والا ٹرائل ہے۔ اگر اسے ویڈیو لنک کے ذریعہ منعقد کرنے کی اجازت دیدی جائے تو عدالتی کارروائی کئی لوگوں کی رسائی میں ہوجائے گی۔

TOPPOPULARRECENT