Tuesday , December 11 2018

مندر نہیں بنے گا تو حکومت بھی نہیںرہے گی : ادھو ٹھاکرے

ایودھیا ۔ /25 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) شیوسینا سربر اہ ادھو ٹھاکرے نے آج کہا کہ اگر ایودھیا میں رام مندر تعمیر نہیں کیا گیا تو مرکز میں بی جے پی حکومت بھی نہیں رہے گی ۔ انہوں نے مودی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ رام مندر کی تعمیر کی راہ ہموار کرنے ایک آرڈیننس لائے ۔ مودی حکومت کو اب ہندوؤں کے جذبات کے ساتھ کھلواڑ کرنا مہنگا پڑے گا ۔ اس لئے ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کا جلد سے جلد آغاز کیا جانا چاہئیے ۔ اس بات کی نشاندہی کرتے ہوئے کہ لوک سبھا انتخابات عنقریب منعقد ہونے والے ہیں ۔ اب پارلیمنٹ کا صرف ایک ہی سیشن باقی رہ گیا ہے اس سیشن میں حکومت کو آرڈیننس لانا ہوگا ۔ شیوسینا نے ہندوتوا کے مسئلہ پر حکومت کی حمایت کی ہے اور ہندوؤں کی خواہش کا گلہ گھونٹا جائے گا تو ہم اسے ہرگز برداشت نہیں کریں گے ۔ آج کا ہر ہندو پوچھ رہا ہے کہ آخر رام مندر کب تعمیر ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ ان کا یہ دورہ ایودھیا سیاسی نوعیت کا نہیں ہے اور نہ ہی ان کا کوئی خفیہ ایجنڈہ ہے ۔ میں بی جے پی سے صرف اتنا کہتا ہوں کہ جب تم انتخابات کیلئے مہم چلاتے ہو تو یہ کہتے ہو کہ دستور کے تحت تمام احکامات کا جائزہ لے کر رام مندر کی تعمیر کا فیصلہ کیا جائے گا لیکن چار سال گزرگئے مرکزی حکومت نے رام مندر کا نام تک نہیں لیا ہے ۔ انہوں نے بی جے پی قیادت سے کہا کہ اگر رام مندر کا مسئلہ عدالت کے ذریعہ ہی طئے پانا ہے تو پھر اسے انتخابات میں موضوع بحث نہیں بنایا جانا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی یہ اعتراف کرلے کہ یہ محض انتخابی ڈرامہ بازی کرتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ لوگ انتخابات کے دوران رام رام کرتے ہیں لیکن انتخابات کے بعد صرف آرام کرتے ہیں۔ یہ بات بی جے پی سے ثابت ہوچکی ہے ۔ بی جے پی نے گذشتہ چار سال کے دوران اس مسئلہ پر کوئی پیشرفت یا پہل نہیں کی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT