Thursday , July 19 2018
Home / جرائم و حادثات / منشیات منتقلی کا بڑا ریاکٹ بے نقاب،گانجہ اور دیگر نشیلی اشیاء ضبط ، اصل سرغنہ گرفتار

منشیات منتقلی کا بڑا ریاکٹ بے نقاب،گانجہ اور دیگر نشیلی اشیاء ضبط ، اصل سرغنہ گرفتار

حیدرآباد /20 مارچ ( سیاست نیوز ) منشیات منتقلی کے ایک بڑے ریاکٹ کو بے نقاب کرتے ہوئے اسپیشل آپریشن ٹیم نے اصل سرغنہ کو گرفتار کرلیا اور اس کے قبضہ سے ڈرگس ، گانجہ اور دیگر نشیلی اشیاء کو ضبط کرلیا ۔ اسپیشل آپریشن ٹیم ملکاجگیری زون نے ایڈیشنل ڈی سی پی مسٹر سید رفیق کی قیادت میں کارروائی کرتے ہوئے 27 سالہ گنیش عرف بابی کو گرفتار کرلیا اور اس کے قبضہ سے کوکین ، ااپتھامعالین ٹائبلیٹ ، ایل ایس ڈی بلاٹس اور گانجہ ضبط کرلیا ہے ۔ بابی اس ٹولی کا اصل سرغنہ تھا ۔ جس کو پولیس نے گذشتہ روز بے نقاب کیا تھا اور شہر میں دو افراد 21 سالہ شیخ احمد ساکن دھان کوٹہ اور 24 سالہ شیخ رشید ساکن کشن باغ کو سرور نگر پولیس نے گرفتار کیا تھا ۔ جو پیشہ سے آٹو ڈرائیور بتائے گئے جبکہ اس ٹولی کے دیگر افراد میں اروند ریڈی کو ایکسائز پولیس اور اربد میر عرف ٹائگر کو گوا پولیس نے گرفتار کرلیا تھا ۔ جبکہ اصل سرغنہ گنیش عرف بابی مفرور تھا ۔ بابی عادی مجرم بتایا گیا ہے ۔ جو نشہ کرنے اور عیش کرنے کیلئے اکثر اس کے ساتھیو ںکے ہمراہ گوا جایا کرتا تھا ۔ مسلسل آنے جانے کے سبب گوا میں اربد میر عرف ٹائگیر سے اس کی جان پہچان ہوئی اور دونوں میں دوستی کے بعد اربد نے انہیں گانجہ فراہم کرنے کی پیشکش کی اور بتایا کہ چونکہ گوا میں گانجہ ملنا مشکل ہے لہذا اگر گانجہ کی اسمگلنگ کی جاتی ہے تو بہت زیادہ فائدہ ہوگا ۔ اس کے بعد یہ دوستی ٹولی کی شکل اختیار کرلی گئی ۔ اربد نے 15 ہزار روپئے فی کیلو گانجہ کی قیمت دی اور اس بات پر راضی بابی نے ضلع کھمم اور ریاست آندھراپردیش کے علاقوں میں کام شروع کردیا ۔ ایجنسی سے گانجہ کم قیمت پر خرید کر گوا میں زائد قیمت پر فروخت کیا جانے لگا ۔ جبکہ گوا سے منشیات کوکین استھامالین ٹائبلیٹ و دیگر نشیلی اشیاء کو شہر م نتقل کرتے ہوئے یہاں فروخت کرنے لگے ۔ بابی کے زیادہ تر گراہک ایک ایم این سی کمپنی کے ملازمین بتائے گئے ۔ ایس او ٹی پولیس اس تعلق سے مزید تحقیقات کر رہی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT