Sunday , December 17 2017
Home / شہر کی خبریں / منشیات کا انٹرنیشنل اسمگلر گرفتار

منشیات کا انٹرنیشنل اسمگلر گرفتار

تحقیقات میں پیشرفت، آج ممیت خان سے پوچھ گچھ
حیدرآباد۔/26جولائی، ( سیاست نیوز) اکسائیز انفورسمنٹ کے ڈائرکٹر اکون سبھروال نے بتایا کہ منشیات کیس میں آج ایک اہم پیشرفت ہوئی ہے۔ نیدر لینڈ کے انٹر نیشنل ڈرگ اسمگلر مائیک کمینگ کو گرفتار کرلیا گیا جس کے دونوں تلگو ریاستوں تلنگانہ اور آندھرا پردیش میں کسٹمرس ہیں ۔ اکسائیز انفورسمنٹ کے ڈائرکٹر اکون سبھروال اور کمشنر چندرا موہن نے آج سکریٹریٹ پہنچ کر چیف سکریٹری ایس پی سنگھ سے ملاقات کی۔ منشیات کی تحقیقات اور فلمی شخصیتوں کے علاوہ دوسروں سے پوچھ تاچھ کی مکمل تفصیلات پیش کی۔ میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے اکون سبھروال نے کہا کہ آج چارمی سے پوچھ تاچھ کی گئی ، کل ممیت خان سے پوچھ تاچھ کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ منشیات معاملہ میں محکمہ اکسائیز کی ایس آئی ٹی ٹیم کو آج ایک بہت بڑی کامیابی ملی ہے ۔ نیدر لینڈ سے تعلق رکھنے والے 33سالہ انٹرنیشنل ڈرگ اسمگلر مائیک کمینگ کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔ جس نے ابھی تک 4 مرتبہ ہندوستان کا دورہ کیا ہے جس میں دو مرتبہ حیدرآباد کا دورہ بھی شامل ہے۔ اس کے انٹر نیشنل ڈرگ مافیا سے تار جڑے ہوئے ہیں۔ ساتھ ہی تلنگانہ اور آندھرا پردیش میں بھی کافی تعداد میں اس کے کسٹمرس ہیں۔ مائیک کمینگ کو جلد از جلد عدالت میں پیش کردیا جائے گا۔ حیدرآباد میں سنسنی مچانے والے منشیات کیس کی عالمی مافیا سے تعلقات ہونے کا ابتداء میں شک کیا جارہا تھا۔ مائیک کمینگ کی گرفتاری سے شکوک حقیقت میں تبدیل ہوگئے ہیں۔ اکون سبھروال نے بتایا کہ انٹرنیشنل اسمگلر سے پوچھ تاچھ سے کئی چونکا دینے والی اطلاعات منظر عام پر آئی ہیں۔ ٹالی ووڈ کی کئی اہم شخصیتوں سے مائیک کمینگ کے تعلقات ہونے کا بھی علم ہوا ہے۔ انٹر نیشنل و کارپوریٹ اداروں میں خدمات انجام دینے والے ملازمین کو ڈرگس سربراہ کرنے میں مائیک کمینگ نے اہم رول ادا کیا ہے۔ چند سافٹ ویر کمپنیوں کے ملازمین کو بھی منشیات فراہم کرچکا ہے۔ فلم انڈسٹری کی اہم شخصیتوں سے اسکولی کمسن طلباء کو اپنا غلام بنانے والے منشیات مافیا کے نیٹ ورک تک پہنچنے کی اکسائیز عہدیدار جی توڑ کوشش کررہے ہیں اور اس میں انہیں کامیابی بھی حاصل ہورہی ہے۔ تحقیقات میں کئی اہم شخصیتوں اور ان کے بچوں کے نام بھی منظر عام پر آرہے ہیں۔ تاہم ایس آئی ٹی عجلت پسندی کا مظاہرہ کرنے کے بجائے پختہ ثبوت اکٹھا کرنے میں مصروف ہے۔

 

 

TOPPOPULARRECENT