Friday , June 22 2018
Home / شہر کی خبریں / منشیات کے خلاف محکمہ پولیس و آبکاری کی کوششیں اکارت ثابت

منشیات کے خلاف محکمہ پولیس و آبکاری کی کوششیں اکارت ثابت

گانجہ پاوڈر اور نشیلی سگریٹ پر ہجوم علاقوں میں فروخت کا سلسلہ جاری
حیدرآباد۔15فروری(سیاست نیوز) شہر میں منشیات کی فروخت کے معاملات اور غیر قانونی سرگرمیوں کو روکنے کے لئے محکمہ پولیس و آبکاری متعدد کوششوں کے باوجود شہر میں منشیات کے کاروبار عروج پر ہیں اور شہر کے کئی علاقو ںمیں گانجہ کی فروخت بلکہ گانجہ کے تیار سگریٹ کی فروخت عام ہونے لگی ہے۔حکومت تلنگانہ کی جانب منشیات کے کاروبار پر سختی کے اقدامات کے بعد بڑے پیمانے پر کی گئی کاروائیاں اس بات کا ثبوت دے رہی تھیں کہ ریاستی حکومت منشیات کے کاروبار کو ختم کرنے کیلئے سنجیدہ ہے لیکن حکومت کی ان کوششوں کے بعد بھی شہر میں منشیات کی فروخت کا سلسلہ بہ آسانی جاری ہے۔باوثوق ذرائع کے مطابق منشیات کی فروخت کے لئے اس کاروبار میں ملوث افراد پہلے سنسان علاقوں کا انتخاب کیا کرتے تھے لیکن اب ان افراد کی جانب سے پرہجوم علاقوں میں منشیات کا کاروبار کیا جانے لگا ہے تاکہ کوئی شک نہ کرسکے۔شہر کے پاش علاقوں کے علاوہ سلم بستیوں میں بھی گانجہ اور پاؤڈر کی فروخت عام ہوتی جا رہی ہے اور نوجوان نسل میں گانجہ کے استعمال کے رجحان میں اضافہ ہونے لگا ہے۔حیدرآباد کے بیشتر کالجس کے اطراف و اکناف کے علاقوں کے علاوہ شہر کے نواحی علاقوں میں موجود کالجس کے اطراف بھی منشیات کی فروخت کا سلسلہ جاری ہے اور اس کو روکنے کیلئے کی جانے والی کوششیں اب تک پوری طرح سے کامیاب نہیں ہو پائی ہیں ۔منشیات کی فروخت اور استعمال میں اب تک شہر میں بیرونی شہریوں کی بڑی تعداد حراست میں لی جا چکی ہے لیکن اب یہ بیرونی شہری معصوم نوجوانو ں کو نشانہ بناتے ہوئے ان کے ذریعہ منشیات کے کاروبار کو فروغ دینے کی کوشش کر رہے ہیں۔شہر حیدرآباد کے کئی علاقو ںمیں کالج طلبہ منشیات کی فروخت میں ملوث افراد کا شکار بننے لگے ہیں اور ان فروخت کنندگان کا نشانہ کالج میں تعلیم حاصل کرنے والے طلبہ ہی ہیں اس کے علاوہ ان کی جانب سے انفارمیشن ٹیکنالوجی کے شعبہ میں خدمات انجام دینے والے ملازمین بھی ہیں جنہیں وہ بہ آسانی شکار بنا رہے ہیں۔بتایاجاتاہے کہ محکمہ آبکاری و انسداد منشیات کے علاوہ خفیہ ایجنسیوں کی جانب سے تعلیمی اداروں اور آئی ٹی کمپنیوں کے قریب بھی نظر رکھی جانے لگی ہے۔

TOPPOPULARRECENT