Saturday , December 15 2018

منچال میں مسلم نوجوان کا قتل اور پرانی قبر میں تدفین

سوٹ میں ملبوس نوجوان کا گلا گھونٹ کر قتل کرنے کا شبہ
حیدرآباد۔ 30 ۔ ڈسمبر ( سیاست نیوز) سائبر آباد کے منچال علاقہ میں ایک مسلم نوجوان کا بہیمانہ طور پر قتل کردیا گیا ، بعد ازاں اس کی نعش کو قبرستان میں ایک موجودہ قبر میں جزوی  طور پر دفنادیا گیا۔ اس بات کا پتہ مقامی عوام کو اس وقت چلا جب مسخ شدہ نعش سے تعفن پھیل گیا تھا۔ منچال پولیس نے مقام واردات پر پہنچ کر متعلقہ تحصیلدار کو طلب کیا اور نعش کو قبر سے باہر نکال کر پوسٹ مارٹم کیلئے دواخانہ منتقل کردیا گیا۔ پولیس اور کلوز ٹیم کی ابتدائی تحقیقات میں یہ معلوم ہوا ہے کہ مقتول نوجوان مسلمان ہے اور اس کا تار سے گلہ گھونٹ کر قتل کیا گیا ہے۔ نوجوان کو قتل سے قبل وزنی پتھر سے چہرہ پر وار کئے گئے ۔ انسپکٹر منچال پولیس نے بتایا کہ مقتول نوجوان کو کسی دوسرے مقام پر قتل کیا گیا ہے اور اس کی نعش کو موجودہ ایک قبر کو توڑ کر جزوی طور پر دفنادیا گیا ۔ مقتول کے جسم پر خاکی پتلون اور سفید شرٹ اور کالے جوتے موجود ہے۔ پولیس کو شبہ ہے کہ کسی تقریب سے واپسی پر مقتول کو نشانہ بنایا گیا ہوگا۔ ابراہیم پٹنم کے قریب واقع اروٹلہ ولیج منچال منڈل میں یہ واقعہ پیش آیا ہے اور پولیس نے اس سلسلہ میں قتل کا مقدمہ درج کرتے ہوئے خاطیوں کی تلاش شروع کردی۔ انسپکٹر منچال مسٹر ایم گنگا دھر نے بتایا کہ لاپتہ افراد کی فہرست میں اس نوجوان کی شناخت کی کوشش جاری ہے۔

TOPPOPULARRECENT