Sunday , April 22 2018
Home / جرائم و حادثات / منگنی تقریب میں جھگڑے پر 9 ملزمین گرفتار

منگنی تقریب میں جھگڑے پر 9 ملزمین گرفتار

ساؤتھ زون پولیس کی کارروائی ، ملزمین جیل منتقل
حیدرآباد ۔ /6 اپریل (سیاست نیوز) حسینی علم شاہ گنج میں منگنی کی تقریب میں کھانے کی سربراہی پر ہوئے تنازعہ کے ضمن میں پیش آئے قتل کی واردات میں ملوث 9 ملزمین کو پولیس نے گرفتار کرلیا ۔ یکم اپریل شیخ امام نے اپنی بیٹی صبا بیگم کا منگنی کی تقریب طریقت منزل فنکشن ہال شاہ گنج حسینی علم میں منعقد کی تھی جہاں پر اشفاق علی خان اور اس کے دیگر ساتھیوں نے انور خان عرف انوبا کو نشانہ بناتے ہوئے اس کا بہیمانہ طور پر قتل کردیا تھا ۔ ساؤتھ زون پولیس نے آج اس قتل میں ملوث ملزمین کی گرفتاری کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ شیخ امام کے کم عمر بیٹے نے کالا پتھر پولیس اسٹیشن سے وابستہ روڈی شیٹر شاہ نور غازی عرف اِفو اور اس کے دیگر دوستوں کو منگنی کی تقریب میں دعوت دی تھی جہاں پر رات دیر گئے اشفاق علی خان نے اپنے ایک ساتھی کے ساتھ ملکر چکن اور مٹن کی ڈش کی سربراہی کو مسئلہ بناتے ہوئے شادی خانے میں گالی گلوج شروع کردی اور کیٹرنگ سپلائرس کو زدوکوب کیا ۔ اس ہنگامہ آرائی کو روکنے کیلئے انور خان نے اشفاق علی خان کو طمانچہ رسید کیا اورتقریب میں بدنظمی ناپیدا کرنے کیلئے کہا ۔ انور خان کے اس برتاؤ کے بعد اشفاق جو حالت نشہ میں تھا نے روڈی شیٹر شاہ نور غازی ، اسد علی خان اور دیگر کو بذریعہ فون رابطہ کیا اور انہیں فوری طریقت منزل فنکشن ہال طلب کرلیا جہاں پر انور خان کو پہلے شدید زدوکوب کیا گیا اور بعد ازاں روڈی شیٹر کی جانب سے انور خان پر چاقوؤں سے حملہ کیا گیا ۔ اس حملے میں انور خان شدید زخمی ہوگیاجس کے نتیجہ میں وہ ہلاک ہوگیا ۔ پولیس نے اس قتل میں ملوث 9 ملزمین سید جمیل الدین ، غوث پاشاہ ، محمد امیر حسین ، محمد کلیم الدین خان ، محمد شاہ رخ خان ، جمال بن ناصر کو گرفتار کرلیا جبکہ ارشد ، موسیٰ ، پرویز ہنوز مفرور ہے ۔ پولیس نے قاتلوں کے قبضہ سے قتل میں استعمال کئے گئے ہتھیار کو برآمد کرلیا اور انہیں عدالت میں پیش کرتے ہوئے جیل بھیج دیا ۔

TOPPOPULARRECENT