Saturday , November 18 2017
Home / جرائم و حادثات / منیٰ حادثہ میں گمشدہ حیدرآبادی حاجی کا پتہ چل گیا

منیٰ حادثہ میں گمشدہ حیدرآبادی حاجی کا پتہ چل گیا

ہاسپٹل میں زیر علاج ، کونسل جنرل جدہ سے تلنگانہ حج کمیٹی کو فہرست کی اجرائی
حیدرآباد۔یکم اکٹوبر، ( سیاست نیوز) حج کے دوران منیٰ سانحہ میں ہندوستان کے جملہ 63 حجاج کرام لاپتہ ہوگئے تھے جن میں سے ایک کا تعلق حیدرآباد سے تھا لیکن حیدرآبادی حاجی کا پتہ چل چکا ہے اور وہ ہاسپٹل میں زیر علاج پائے گئے ہیں۔ کونسل جنرل جدہ نے سعودی حکام کی جانب سے ہندوستانی لاپتہ حجاج کرام کی جاری کردہ فہرست کو تلنگانہ حج کمیٹی روانہ کیا۔ ان میں 91سالہ محمد زین العابدین ساکن حیدرآباد کا نام شامل ہے۔ وہ اپنی اہلیہ محترمہ زینت ساجدہ کے ساتھ حج کمیٹی کے ذریعہ روانہ ہوئے تھے۔ منٰی میں بھگدڑ واقعہ کے بعد سے وہ لاپتہ تھے۔ تاہم ہندوستانی حج مشن کے حکام نے ایک ہاسپٹل میں ان کا پتہ چلایا۔ بتایا جاتا ہے کہ طبیعت بگڑجانے کے باعث وہ اپنے قافلہ سے الگ ہوگئے اور حج والینٹرس نے انہیں ہاسپٹل میں شریک کرایا تھا۔ اس طرح تلنگانہ حج کمیٹی سے روانہ ہونے والے تمام حجاج کرام کی خیریت کی توثیق ہوئی ہے۔ اسی دوران سانحہ میں جاں بحق ہونے والی ایل بی نگر کی حاجی بی بی جان کے شوہر اور دو رشتہ دار جمعہ کی صبح ایر انڈیا کی فلائیٹ سے حیدرآباد واپس ہورہے ہیں۔ انہوں نے مکہ سے ہی وطن واپسی کا فیصلہ کیا اور اپنے طور پر ٹکٹ حاصل کرکے واپس ہورہے ہیں۔ اسپیشل آفیسر حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور نے حجاج کرام کے قافلوں کی مدینہ منورہ روانگی اور حیدرآباد واپس کے انتظامات کا جائزہ لیا۔ وہ اس سلسلہ میں خادم الحجاج سے ربط میں ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ 4 اکٹوبر سے قافلے مدینہ منورہ کیلئے روانہ ہوں گے جبکہ 14 اکٹوبر سے وطن واپسی کا آغاز ہوگا۔ 14تا20اکٹوبر ایر انڈیا کے 16 فلائیٹس مدینہ منورہ سے حیدرآباد واپس ہوں گے جبکہ 17ویں فلائیٹ توقع ہے کہ جدہ سے حیدرآباد پہنچے گی۔ حج ٹرمنل شمس آباد انٹر نیشنل ایرپورٹ پر حجاج کرام کی واپسی کے انتظامات کا جائزہ لینے کیلئے بہت جلد عہدیداروں کا اجلاس طلب کیا جائیگا۔

TOPPOPULARRECENT