Friday , December 15 2017
Home / Top Stories / منی پور اور گوامیں بھی بی جے پی حکومت

منی پور اور گوامیں بھی بی جے پی حکومت

منوہر پاریکر چیف منسٹر گوا منتخب ، منی پور میں پارٹی لیڈر کا آج انتخاب

پاناجی /امپھال۔ /12 مارچ (سیاست ڈاٹ کام)اترپردیش اور اترکھنڈ میں کامیابی کے بعد بی جے پی نے گوا اور منی پور میں بھی اقتدار کو یقینی بنادیا ہے ۔ پارٹی کو اگر چہ واضح اکثریت حاصل نہیں ہوئی لیکن مابعد انتخابات مختلف سیاسی جماعتوں کے ساتھ اتحاد کرتے ہوئے وہ حکومت تشکیل دے رہی ہے ۔ بی جے پی کی گوا سے تعلق رکھنے والی طاقتور شخصیت منوہر پاریکر نے ایم جی پی ، سابق حلیف ، این سی پی ، آزاد اور دیگر چھوٹی پارٹیوں کی تائید سے حکومت تشکیل دینے کا دعویٰ بھی کردیا ۔ گورنر گوا مریڈولا سنہا نے منوہر پاریکر کو چیف منسٹر منتخب کرتے ہوئے انہیں حلف برداری کے بعد اندرون 15 یوم اکثریت ثابت کرنے کی ہدایت دی ہے ۔ 40 رکنی اسمبلی میں بی جے پی کے 13 ارکان منتخب ہوئے جبکہ کانگریس 17ارکان کے ساتھ سب سے بڑی جماعت رہی ۔ منی پور میں بھی بی جے پی نے آج رات 32 ارکان اسمبلی کی تائید کا دعویٰ کیا ۔ اس طرح وہ حکومت تشکیل دے گی ۔  60 رکنی اسمبلی میں بی جے پی نے 21پر کامیابی حاصل کی اور وہ مزید 11 ارکان کی تائید حاصل کرنے میں کامیاب رہی ۔ اس طرح جملہ تعداد 32ہوگئی ہے ۔ آسام کے وزیر ہیمنتا بسواسرما نے گورنر نجمہ ہبت اللہ سے ملاقات کے بعد یہ بات بتائی ۔ انہوں نے کہا کہ لیجسلیچر پارٹی لیڈر کا کل انتخاب ہوگا ۔ منی پور میں بی جے پی کو این پی پی ، ایل جی پی ، ترنمول کانگریس اور کانگریس کے ایک رکن اسمبلی کی تائید حاصل ہوئی ہے ۔ گوا بی جے پی انچارج نتن گڈکری نے کہا کہ منوہر پاریکر بحیثیت چیف منسٹر گوا حلف برداری سے پہلے وزیر دفاع کی حیثیت سے مستعفی ہوجائیں گے۔
یو پی کیلئے راجناتھ سنگھ اور سریش کھنہ دعویدار
نئی دہلی ۔ /12 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی پارلیمانی پارٹی اجلاس میں اترپردیش اور اتراکھنڈ کیلئے چیف منسٹر امیدوار کے انتخاب کا اختیار صدر امیت شاہ کو دیا گیا ۔ پارلیمانی بورڈ سکریٹری اور مرکزی وزیر جے پی ندا نے بتایا کہ ان ریاستوں میں پارٹی مبصرین ارکان اسمبلی سے مشاورت کے بعد امیت شاہ کو رپورٹ پیش کریں گے ۔ یو پی میںسات مرتبہ رکن اسمبلی منتخب ہونے والے سریش کھنہ اور مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ کو اہم دعویدار سمجھا جارہا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT