Saturday , December 15 2018

موبائیل فون ‘ ٹیاب و کمپیوٹر اسکرین کی جزئیات آنکھوں کیلئے خطرناک

بینائی کے شدید متاثر ہونے کے اندیشے ۔ امریکی یونیورسٹی کی تحقیق میں انکشاف
حیدرآباد۔12اگسٹ(سیاست نیوز) موبائیل فون‘ ٹیاب ‘ کمپیوٹر اسکرین اور لیاپ ٹاپ اسکرین سے نکلنے والی جزئیات آنکھوں کیلئے انتہائی خطرناک ہیں اور یہ’بلو مالیکیولرس‘ کا منفی اثر بینائی کو ختم کرسکتا ہے۔ امریکہ کی یونیورسٹی آف ٹولیڈو کی تحقیق کے مطابق کسی بھی ڈیجیٹل اسکرین سے نکلنے والی بلو مالیکیولرس آنکھ پر منفی اثرات ڈالتے ہیں اور ان اسکرین پر مسلسل کام کرنے سے نہ صرف بینائی متاثر ہونے کا خدشہ ہے بلکہ دیگر کئی امراض بالخصوص آنکھوں اور دماغ سے متعلق بیماریوں اور کینسر کے خدشات میں اضافہ کا بھی امکان ہے۔ رپورٹ کے مطابق موبائیل ‘ ٹیاب اور کمپیوٹر و لیاپ ٹاپ سے نکلنے والے بلو مالیوکیولرس سیدھے آنکھ میں موجود قوت بصارت کو کمزور کرنا شروع کردیتا ہے جس کی بنیادی وجہ ان کا اثر ’’ریٹینا‘‘ پر ہونا ہے۔ یونیورسٹی کے شعبہ کیمسٹری کی جانب سے کی گئی تحقیق کے دوران اس بات کا انکشاف ہوا ہے کہ ان ڈیجیٹل اسکرین کے استعمال کنندگان کی بصارت کی صلاحیت تیزی سے ختم ہوتی جا رہی ہے اور ان میں بصارت کی حس رکھنے والی پردۂ چشم کی کمزوری بنیادی عنصر ہے جبکہ اس کے ساتھ ساتھ قرنیۂ چشم (کارنیا) پر بھی مسلسل اسکرین پر نگاہیں مرکوز ہونے سے منفی اثرات ہونے لگتے ہیں۔ مطالعہ کے دوران اس بات کا بھی انکشاف کیا گیا ہے کہ ڈیجیٹل اسکرین سے جاری ہونے والے بلومالیکیولرس کے خطرناک ہونے میں کوئی دو رائے نہیں ہے اور اس سے کینسر کے خطرات میں بھی اضافہ ہونے لگتا ہے اس کے علاوہ ماہرین کا کہناہے کہ یہ مالیوکیولرس کم خوابی اور بے چینی کی شکایات بھی پیدا کرتے ہیں ۔ تحقیق میں شامل اسکالرس کا کہناہے کہ یہ کسی ایک ملک ریاست یا شہر کا مسئلہ نہیں ہے بلکہ یہ عالمی مسئلہ بنتا جا رہاہے کیونکہ بلو مالیکیولرس تمام ڈیجیٹل آلات میں پائے جاتے ہیں اور ان آلات کا استعمال دنیا بھر میں ہونے لگا ہے اور یہ بلو مالیوکویلرس آنکھوں کے حساس خلیات کو متاثر کرنے لگے ہیں جس کی وجہ سے بینائی کی صلاحیت میں تیزی سے گراوٹ ریکارڈ کی جا رہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT