Sunday , May 20 2018
Home / Top Stories / ’’مودی اپنے سیاسی مخالفین کیخلاف ناقابل یقین کہانیاں گھڑنے کا سلسلہ بند کریں‘‘

’’مودی اپنے سیاسی مخالفین کیخلاف ناقابل یقین کہانیاں گھڑنے کا سلسلہ بند کریں‘‘

آیا محض الیکشن جیتنے ہر دن ایک نئی کہانی گھڑنا ضروری ہے ؟ وزیراعظم سے شتروگھن سنہا کا سوال

نئی دہلی ۔11 ڈسمبر۔( سیاست ڈاٹ کام) اداکار سے سیاستداں بننے والے بی جے پی کے سینئر رکن پارلیمنٹ شتروگھن سنہا نے وزیراعظم نریندر مودی کی جانب سے اپنے سیاسی مخالفین کے خلاف بے بنیاد اور ناقابل یقین کہانیاں گھڑے جانے پر سوال اُٹھایا ہے ۔ سنہا کے ان تبصروں سے ایک دن قبل وزیراعظم مودی نے گجرات کے علاقہ سانند میں ایک انتخابی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ کانگریس کے قائدین نے نئی دہلی میں پاکستانی ہائی کمشنر سے ملاقات کی تھی ۔ مودی کے اس دعویٰ پر تبصرہ کرتے ہوئے شترو نے ٹوئیٹر پر لکھا کہ ’’عزت مآب صاحب ! محض کسی بھی طرح الیکشن جیتنے کیلئے اور وہ بھی اس عمل کے آخری حصہ میں کیا یہ ضروری ہے کہ اپنے سیاسی مخالفین کے خلاف روزآنہ ایک نئی بے بنیاد اور ناقابل یقین کہانی گھڑی جائے ؟ اب تو انھیں (سیاسی مخالفین کو ) پاکستان کے ہائی کمشنر اور جنرلوں سے تک جوڑ دیا جارہا ہے ؟ ! ناقابل یقین ہے ! ۔ وزیراعظم مودی نے اتوار کو الزام عائد کیا تھا کہ منی شنکر ایئر کی رہائش گاہ پر کانگریس قائدین کے ایک گروپ نے پاکستانی ہائی کمشنر سے ملاقات کی تھی ۔ مودی نے سانند میں انتخابی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ اس میٹنگ میں سابق وزیراعظم منموہن سنگھ اور سابق نائب صدر جمہوریہ حامد انصاری نے بھی شرکت کی تھی اور اجلاس کے دوسرے دن ائیر نے کہا تھا کہ ’’میں نیچ ہوں ‘‘ ۔ ایئر نے فوری طورپر معذرت خواہی بھی کی تھی اور انھیں کانگریس سے معطل کردیا گیا تھا ۔ شتروگھن سنہا نے وزیراعظم کو مشورہ دیا کہ وہ ماحول کو فرقہ وارانہ بنانے کا سلسلہ بند کریں اور ان وعدوں پر توجہ دیں جو 2014 ء کے عام انتخابات کے موقع پر بی جے پی کی طرف سے کئے گئے تھے ۔ شتروگھن سنہا نے طنز و تنقید پر مبنی ریمارکس میں مزید لکھا کہ ’’عالیجناب ! نئے موڑ اختیار کرنے ، پلٹنے ، جھپٹنے ، کہانیاں گھڑنے اور پردہ پوشی کیلئے بہانہ بازیوں کے بجائے سیدھے ان وعدوں کی طرف لوٹیں جو ہم نے کئے تھے ۔ یہ (وعدے عوام کیلئے ) گھر، ترقی ، نوجوانوں کو روزگار ، صحت ، ’وکاس ماڈل‘ سے متعلق تھے ۔ ماحول کو فرقہ وارانہ بنانا بند کیجئے ۔ صحتمند سیاست اور صحتمند انتخابات کی طرف لوٹ آئیں۔ جئے ہند‘‘ ۔ پٹنہ صاحب کے بی جے پی رکن پارلیمنٹ اور سابق مرکزی وزیر شتروگھن سنہا مودی حکومت کی اکثر پالیسیوں کے سخت مخالف ہیں ۔ بالخصوص نوٹ بندی اور جی ایس ٹی پر سخت تنقید کرتے رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT