Monday , December 18 2017
Home / Top Stories / مودی اپنے پیدائشی مقام و ادنگر میں جذبات سے مغلوب

مودی اپنے پیدائشی مقام و ادنگر میں جذبات سے مغلوب

وادنگر نے زہر پینا سکھایا ، لارڈشیوا کے آشیرواد سے کاشی پہونچ گیا، وزیراعظم کا خطاب

وادنگر ۔ 8 اکتوبر ۔ ( سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے اس جلیل القدر عہدہ پر فائز ہونے کے بعد پہلی مرتبہ آج اپنے پیدائشی گاؤں کا دورہ کیا ۔اس موقع پر انھوں نے گجرات کے اس مقام وادنگر میں ایک روڈ شو میں حصہ لیا اور وہ اسکول بھی گئے جہاں بچپن میں انھوں نے ابتدائی تعلیم حاصل کی تھی ۔ انھوں نے کہاکہ اس ٹاؤن نے ان کو زہر پینے کا ہنر سکھایا ہے ۔ مودی نے بی این ہائی اسکول پہونچکر روایتی جذباتی انداز میں وہاں کی مٹی اُٹھاکر اپنی پیشانی پر لگالیا۔ مودی نے جو کبھی وادنگر ریلوے اسٹیشن پر چائے بیچا کرتے تھے ۔ 2001 سے 13 سال تک چیف منسٹر رہنے کے بعد گجرات سے دہلی تک اپنے سفر کو یاددلایا۔ مودی نے کہا کہ ان تمام برسوں کے دوران بعض افراد کی جانب سے زہرافشانی کے باوجود وہ لارڈ شیوا کے آشیرواد سے قوم کی خدمت کرسکے ہیں۔ وہ دراصل اپنی ریاست میں 2002 ء کے گودھرا فسادات کے بعد بحیثیت چیف منسٹر اپنی معیاد کے دوران مختلف گوشوں سے کی جانیوالی تنقیدوں کا حوالہ دے رہے تھے ۔ انھوں نے کہاکہ ’’وادنگر نے مجھے زہر پینا سکھایا ‘‘ ۔ مودی نے کہا کہ ان کا مقام پیدائش لارڈ شیوا کی سرزمین ہے جیسے کاشی (واراناسی) ان کا حلقہ لوک سبھا بھی لارڈ شیوا کی سرزمین ہے ۔ وزیراعظم مودی یہاں نوتعمیرشدہ میڈیکل کے افتتاح اور ٹیکہ اندازی مہم کے آغاز کے بعد جلسہ عام سے خطاب کررہے تھے ۔ انھوں نے کہاکہ ’’میں نے وادنگر سے اپنا سفر شروع کیا اور اب میں کاشی پہونچ چکا ہوں۔ وادنگر کی طرح کاشی بھی بھولے بابا کا ٹاؤن ہے۔ بھولے بابا ( لارڈ شیوا) کے آشیرواد نے مجھے بے پناہ ہمت و طاقت بخشی ہے اور یہ طاقت مجھے اس سرزمین سے ملنے والا سب سے بڑا تحفہ ہے ‘‘ ۔ مودی نے روایتی جذباتی انداز میں کہاکہ ’’بھولے بابا کا آشیروادمجھے زہر پینے اور ہضم کرنے کی طاقت بخشا ہے ۔ اس صلاحیت کی بدولت میں ان تمام کا مقابلہ کرنے کے قابل بن سکا ہوں جو 2001 ء سے میرے خلاف زہر اُگلتے رہے ہیں۔ یہ صلاحیت مجھے ان تمام برسوں میں سچی لگن سے مادروطن کی خدمت کرنے کی طاقت بخشی ہے ۔ وزیراعظـم مودی نے وادنگر کے اسکول میں ابتدائی تعلیم حاصل کی تھی ۔ یہ قدیم ٹاؤن ہے جہاں کسی زمانہ میں بدھ خانقاہ ہوا کرتے تھے اور صدیوں قدیم شیوالہ ( شیومندر) بھی ہے ۔ اسمبلی انتخابات کا عنقریب سامنا کرنے والی ریاست گجرات کے دو روزہ دورہ کے دوسرے دن مودی نے روڈ شو میں حصہ لیا ۔ اس موقع پر عوام کی کثیرتعداد نے سڑکوں پر جمع ہوکر ان کا خیرمقدم کیا۔ راستہ میں جگہ جگہ ’’مودی مودی‘‘ کے نعرے لگائے جارہے تھے اور ان پر پھول برسائے جارہے تھے ۔ مودی نے جذبات سے مغلوب ہوکر کہا کہ ’’ہجوم میں میں ایسے کئی چہرے دیکھا ہوں جن سے بچپن کی یادیں تازہ ہوگئیں‘‘۔

TOPPOPULARRECENT