Friday , September 21 2018
Home / Top Stories / مودی جی دوسرے مودی جی کو وطن واپس لائیں

مودی جی دوسرے مودی جی کو وطن واپس لائیں

بی جے پی حکومت کرپشن میں سرگرم ،صدر کانگریس راہول گاندھی کا الزام

منڈی پتھر (میگھالیہ) ۔ /20 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) صدر کانگریس راہول گاندھی نے اپنے دوسرے دورہ میگھالیہ کے موقع پر جہاں عنقریب انتخابات مقرر ہیں بی جے پی زیرقیادت مرکزی حکومت پر آج تنقید کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ وہ سرگرمی سے کرپشن میں شرکت کررہی ہے ۔ بینکوں کے قرضہ ادا نہ کرنے والے افراد جیسے وجئے ملیا اور نیروومودی کو دیئے جارہے ہیں جو قرضے حاصل کرنے کے بعد ملک سے فرار ہورہے ہیں ۔ راہول گاندھی شمال مشرقی ہند کی ریاست میگھالیہ کے دو روزہ انتخابی دورہ پر ہیں ۔ انہوں نے کل تورہ اور شیلانگ میں روڈ شو کیا تھا اور جینتیا ہلز میں ان کے دورے کے آخری دن انتخابی جلسہ عام مقرر ہے ۔ صدر کانگریس نے مرکزی حکومت کی جانب سے چرچوں اور مذہبی مقامات کو خوبصورت بنانے کی پیشکش کو ریاست میں عیسائی اکثریت کو لالچ دینے کی کوشش قرار دیتے ہوئے الزام عائد کیا کہ تعصب میں زبردست اضافہ ہوگیا ہے اور شمال مشرقی ہند کے عوام کی توہین کی جارہی ہے ۔ وجئے ملیا اور نیرومودی کے اسکینڈلس کے ساتھ ہی ہمیں معلوم ہوگیا ہے کہ حکومت نہ صرف کرپشن کے خاتمہ سے قاصر رہی بلکہ سرگرمی سے اس میں ملوث ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس حکومت نے عوام کو امید ، سلامتی اور معاشی ترقی دینے کے بجائے اس کو ناامیدی ، بیروزگاری ، خوف ، نفرت اور تشدد کا تحفہ دیا ہے ۔ مرکز پر نیروومودی کے ملک سے فرار ہونے کے سلسلے میں تنقید کرتے ہوئے راہول گاندھی نے کہا کہ وہ وزیراعظم نریندر مودی جی سے درخواست کرنا چاہتے ہیں جو ہم تمام کی جانب سے ہوگی کہ دوسرے ’’مودی جی‘‘ کو ملک واپس لایا جائے ۔ جب بھی وہ کسی بیرونی دورہ پر جائیں دوسرے مودی جی کو اپنے ساتھ وطن واپس لائیں ۔ ہم سب بحیثیت قوم ان کے شکر گزار ہوں گے کیونکہ ہماری سخت محنت سے حاصل کی ہوئی رقم واپس مل جائے گی ۔ بی جے پی تنقید جاری رکھتے ہوئے صدر کانگریس نے کہا کہ ان (بی جے پی) کے پاس بہت زیادہ رقم ہے اور بعض مالدار ترین ہندوستانی اس میں شامل ہیں ۔ امید ہے کہ جو لوگ چوری کی رقم ہندوستانی بینکوں سے حاصل کرکے ملک سے باہر بھاگ گئے وہ بھی بی جے پی کی تائید کرتے تھے ۔ انہوں نے میگھالیہ کے قبائیلیوں پر زور دیا کہ بھگوا پارٹی کو /27 فبروری کے ریاستی اسمبلی انتخابات میں سبق سکھائیں ۔ انہوں نے مرکزی وزارت سیاحت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اس نے گزشتہ ماہ پیشکش کی تھی کہ میگھالیہ میں گرجاگھروں اور مذہبی مقامات کو خوبصورت بنایا جائے گا ۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ بی جے پی بعض کانگریس ارکان کو بھی خرید رہی ہے ۔ مرکزی وزیر سیاحت کے جے الفانس نے 70 کروڑ روپئے مالیتی پراجکٹ سودیش درشن اسکیم کے تحت اعلان کیا ہے جس کے نتیجہ میں میگھالیہ میں گرجاگھروں اور مذہبی مقامات کو خوبصورت بنایا جائے گا ۔ یہ عوام کو ترغیب دینے کی ایک کوشش ہے ۔ بی جے پی نے بعض پارٹی ارکان کو خرید لیا ہے ۔ جن کا خیال ہے کہ وہ خدا کو بھی خریدسکتے ہیں ۔ راہول گاندھی نے کہا کہ چرچوں ، مندروں ، گردواروں ، مسجدوں اور مذہبی مقامات کو نہ خریداجاسکتا ہے اور نہ فروخت کیا جاسکتا ہے ۔ بی جے پی کو یہ بات یاد رکھنی چاہئیے ۔ انہوں نے کہا کہ یو پی کے دلت اور مدھیہ پردیش کے ایک مذہبی رہنما پر تعصب اور عوام کی توہین کے کئی الزامات عائد ہیں ۔ انہوں نے تین گارو نوجوانوں کو دھمکیاں دینے اور ہراسانی کے واقعات کا بھی حوالہ دیا ۔

TOPPOPULARRECENT