Saturday , December 15 2018

مودی حکومت‘ملک کے جمہوری روایات اور سماجی ڈھانچہ کو توڑ رہی ہے

معاشی نظام کو بھی شدیدنقصان ‘ راہول میرے بھی باس ہیں ‘ بی جے پی کو شکست دینے ہم خیال پارٹیوں سے اتحاد :سونیاگاندھی

بی جے پی نے ملک بھر میں نفرت کا ماحول پیدا کیا
آئینی اداروں پر حملے اور معاشرہ کو برباد کرنے کی منظم سازش

نئی دہلی، 8 فروری (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس پارلیمانی پارٹی کی لیڈر سونیا گاندھی نے مرکز کی نریندر مودی حکومت پرشدید تنقیدکرتے ہوئے کہا ہے کہ گزشتہ چار سال کے دوران مودی حکومت نے خوف کا ماحول پیدا کرنے کے ساتھ ملک کے اقتصادی نظام کو شدید نقصان پہنچایا ہے ۔محترمہ گاندھی نے کانگریس پارلیمانی پارٹی کی میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے آج کہا کہ مودی حکومت نے ملک میں جمہوریت کی بنیاد پارلیمنٹ ، عدلیہ، میڈیا اور سماجی تانے بانے کو سوچی سمجھی سازش کے تحت برباد کیا ہے اور آئینی اداروں پر حملہ کرکے انہیں نقصان پہنچایا ہے ۔انہوں نے کہا کہ پچھلے چار سال میں یہ حکومت صرف کھوکھلے دعوے کررہی ہے ۔ ملک کے اقتصادیات کے تعلق سے یہ سرکار بڑے بڑے دعوے کررہی ہے لیکن حقیقت اس کے برخلاف ہے ۔ کھیتی باڑٰی میں لگاتار کمی ہورہی ہے اور کسان خودکشی کررہے ہیں۔چھوٹے اور دیہی کاروبار ختم ہورہے ہیں اور ملک کا نوجوان بے روزگاری کی مار جھیل رہا ہے ۔سونیا گاندھی نے مزید کہا کہ ملک میں نئی سرمایہ کاری نہیں ہورہی ہے جس کی وجہ سے نوکریوں کے نئے مواقع میسر نہیں ہوپارہے ہیں۔صدر کانگریس راہول گاندھی کو اپنا بھی ’’باس‘‘ قرار دیتے ہوئے سونیا گاندھی نے آج کہا کہ انہوں نے پارٹی کی کامیابیوں کے پیشرفت کا جائزہ لینا شروع کردیا ہے اور وہ آنے والے لوک سبھا انتخابات میں بی جے پی کی شکست کو یقینی بنانے کیلئے ’’ ہم خیال پارٹیوں ‘‘ سے مل جھل کر کام کریں گی ۔ کانگریس پارلیمانی پارٹی چیرمین نے بی جے پی اور مودی حکومت پر ہمہ رخی ناکامیوں پر تنقید کی اور الزام عائد کیا کہ حکومت نے اقلیتوں کے خلاف تشدد کو بڑھاوا دیاہے تاکہ سماج کو منتشر کردیا جائے ۔ وہ اپنی تنگ نظر سیاسی پالیسیوں کے فائدے کیلئے سماج میں پھوٹ ڈال رہی ہے اور یہ عمل کرناٹک میں بھی دیکھا جائے گا جہاں آئندہ چند ماہ میں اسمبلی انتخابات ہونے والے ہیں ۔ سابق صدر کانگریس جنہوں نے گذشتہ سال ڈسمبر میں 19سال بعد کانگریس کی صدارت اپنے فرزند کے تفویض کی ہے ۔ کانگریس پارلیمانی پارٹی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آنے والے دنوں میں کانگریس ہم خیال پارٹیوں کو متحد کرے گی ۔ کانگریس کیلئے کامیابی کی راہیں کھل جانے کی خوشخبری سناتے ہوئے سونیا گاندھی نے پارٹی کے ارکان پارلیمنٹ کو ہدایت دی کہ وہ راہول گاندھی کے ساتھ وفاداری ‘ جانفشانی ‘ خلوص دل کے ساتھ جوش و خروش سے کام کریں تاکہ پارٹی کو مضبوط بنایا جاسکے اور انہوں نے کہا کہ راہول میرے بھی ’’باس ‘‘ ہیں ‘ ہم نے نئے کانگریس صدر کو منتخب کیا ہے اور آپ اپنی منظوری اور میری مرضی سے راہول کو صدر بنایا ہے ۔ میں ان کیلئے نیک تمناؤں اظہار کرتی ہوں اور ان کے مستقبل کے روشن ہونے کی متمنی ہوں ۔ مجھے پورا یقین ہے کہ ان کی قیادت میں اجتماعی طاقت بن کر کام کریں گے اور پارٹی کے شاندار ماضی و قسمت کا احیاء کریں گے اور پارٹی کو کامیاب بنانے کا عمل شروع ہوچکا ہے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT