Tuesday , October 23 2018
Home / سیاسیات / مودی حکومت قومی ضمانت روزگار اسکیم کو ختم کرنے کوشاں

مودی حکومت قومی ضمانت روزگار اسکیم کو ختم کرنے کوشاں

نئی دہلی 4 جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) سی پی ایم نے آج نریندر مودی حکومت پر الزام عائد کیا کہ وہ سماجی تحفظ کے مسائل کی اہمیت کو گھٹانے یا انہیں ختم کرنے کی کوشش کر رہی ہے ۔ پارٹی نے کہا کہ بی جے پی کے اقتدار سنبھالنے کے بعد عوام کا اچھے دنوں کا خواب کڑوی گولیوں میں تبدیل کردیا گیا ہے ۔ پارٹی پولیٹ بیورو کی رکن برندا کرت نے اخباری نمائندوں س

نئی دہلی 4 جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) سی پی ایم نے آج نریندر مودی حکومت پر الزام عائد کیا کہ وہ سماجی تحفظ کے مسائل کی اہمیت کو گھٹانے یا انہیں ختم کرنے کی کوشش کر رہی ہے ۔ پارٹی نے کہا کہ بی جے پی کے اقتدار سنبھالنے کے بعد عوام کا اچھے دنوں کا خواب کڑوی گولیوں میں تبدیل کردیا گیا ہے ۔ پارٹی پولیٹ بیورو کی رکن برندا کرت نے اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ اچھے دنوں کا عوام کا جو خواب بی جے پی اور نریندر مودی نے انتخابی مہم کے دوران دکھایا تھا اب کڑوی دوائی میں تبدیل ہوگیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ منافقت کی انتہا ہے ۔ کرت نے دیہی ترقیات کے وزیر نتن گڈکری کو ایک مکتوب روانہ کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ حکومت مہاتما گاندھی قومی دیہی ضمانت روزگار قانون کو یا تو ختم کرنا چاہتی ہے یا اس کی اہمیت گھٹانے کیلئے کوشاں ہے ۔

انہوں نے کہا کہ ایک ایسی جماعت جس نے انتخابی منشور میں عوام سے وعدہ کیا تھا کہ وہ روزگار کے مواقع پیدا کریگی اب حصول روزگار کے واحد ضمانتی قانون ( MNREGA ) کو ہی برخواست کرنے کی تجویز پر غور کر رہی ہے ۔ حکومت پر یہ الزام عائد کرتے ہوئے کہ وہ کارپوریٹ شعبہ کے مفادات کا تحفظ کرنے ہر ممکن اقدامات کر رہی ہے برندا کرت اور سینئر سی پی ایم لیڈر حنان ملا نے کہا کہ مودی حکومت سے اسٹاک ایکسچینج خوش ہے لیکن دیہی غریب عوام اور قومی ضمانت روزگار اسکیم کے تحت روزگار حاصل کرنے والے افراد خوش نہیں ہیں ۔ حنان ملا نے کہا کہ چیف منسٹر راجستھان وسندھرا راجے سندھیا نے پہلے ہی اس اسکیم کے قانونی پہلووں کو ختم کرنے کی شروعات کردی ہے ۔

انہوں نے واضح کردیا ہے کہ وہ مزدور مخالف رویہ اختیار کر رہی ہیں اور انہوں نے لیبر قوانین میں تبدیلی کرتے ہوئے کاروباری گھرانوں کے مفادات کا تحفظ کرنے کا عمل شروع کردیا ہے ۔ برندا کرت اور حنان ملا نے یو پی اے کی دوسری معیاد کی حکومت کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ اس حکومت نے قومی ضمانت روزگار اسکیم کو صرف اقتصادی وجوہات تک محدود کردیا تھا اور اس کیلئے بجٹ میں رقم کی فراہمی کو کم کردیا گیا تھا ۔ برندا کرت نے نتن گڈکری کو اپنے مکتوب میں کہا کہ یہ بھی حیرت کی بات ہے کہ اس اسکیم کے تحت 15 دن کے اندر جو اجرتیں فراہم کرنا ضروری ہے حکومت وہ بھی ادا نہیں کر رہی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT