Monday , December 18 2017
Home / Top Stories / مودی حکومت میں اقلیتیں اور دلت غیر محفوظ: مایاوتی

مودی حکومت میں اقلیتیں اور دلت غیر محفوظ: مایاوتی

مسلمانوں کو دہشت گردی کے نام پر ہراساں کیا جا رہا ہے ‘ بی ایس پی سربراہ کا خطاب
آگرہ 21 اگسٹ ( سیاست ڈاٹ کام ) بی جے پی پر دلتوں کو گمراہ اور راغب کرنے کیلئے مذہب کا استعمال کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے بی ایس پی سربراہ مایاوتی نے کہا کہ این ڈی اے کے دور حکومت میں اقلیتیں اور دلت اس ملک میں محفوظ نہیں ہیں۔ کوٹھی مینا بازار میں ایک متاثر کن سرو جن ہتئے ‘ سروجن سکھئے ریلی سے خطاب کرتے ہوئے مایاوتی نے کہا کہ دھما چیتنا یاترا کے نام پر بی جے پی کی جانب سے بی ایس پی کو بدنام کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے لیکن یہ کوشش ناکام رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی کی ریلی جھوٹ کا پلندہ ہے اور بی جے پی کی جانب سے بی ایس پی کو بدنام کرتے ہوئے دلتوں کو گمراہ کرنے کا منصوبہ آشکار ہوچکا ہے ۔ بی جے پی کو مخالف اقلیت اور مخالف دلت قرار دیتے ہوئے بی ایس پی سربراہ نے الزام عائد کیا کہ مسلمانوں کو دہشت گردی کے نام پر ہراساں کیا جا رہا ہے تو دلت بھی مودی زیر قیادت حکومت میں محفوظ نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی کس طرح سے یو پی میں لا اینڈ آرڈر کو بہتر بنائیگی جبکہ وہ دوسری ریاستوں بشمول دہلی میں ایسا کرنے میں ناکام رہی ہے ۔ اچھے دن کے وعدہ پر وزیراعظم پر طنز کرتے ہوئے مایاوتی نے کہا کہ اچھے دن نہیں آئے ۔ غریب عوام کو سستا راشن نہیں مل رہا ہے ۔ انہیں رہنے گھر نہیںہیں ۔ چھوٹے کاروبار حکومت کی پالیسیوں کی وجہ سے متاثر ہو رہے ہیں تو بڑے کاروبار اور صنعتیں ٹیکس مراعات اور قرض معافی حاصل کرتے ہوئے ترقی کر رہی ہیں۔ ہندووں کی آبادی سے متعلق آر ایس ایس سربراہ سدرشن کے ریمارک پر بھی انہوں نے تنقید کی اور کہا کہ اگر ہندو اپنی آبادی بڑھائیں گے تو وہ اپنے بچوں کو کیا کھلائیں گے ؟ ۔ کیا سدرشن وزیر اعظم مودی سے انہیں راشن فراہم کرنے کی خواہش کرینگے ۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کے بیانات اب فیشن بن گئے ہیں کیونکہ ان قائدین کا خیال ہے کہ ایسے بیانات سے ان کا سماجی موقف بہتر ہوگا ۔

 

مایاوتی کا بی جے پی اور آر ایس ایس کے فرقہ وارانہ عزائم کے خلاف انتباہ ‘ بی جے پی جوابی الزام
آگرہ۔21اگست ( سیاست ڈاٹ کام ) بی ایس پی کی صدر مایاوتی نے آج عوام کو آر ایس ایس اور بی جے پی کے ’’ فرقہ وارانہ عزائم ‘‘ کے خلاف انتباہ دیا اور پُرزور انداز میں اُن سے کہا کہ وہ مشتعل نہ ہوجائیں ۔ 2017ء کے یو پی اسمبلی انتخابات کے دوران بی جے پی عوام کو مشتعل کرکے فرقہ وارانہ فسادات کا منصوبہ بنارہی ہے ۔ عوام کو چاہیئے کہ پارٹی کے گھناؤنے عزائم کو اچھی طرح سمجھ جائیں ۔ نئی دہلی سے موصولہ اطلاع کے بموجب مایاوتی کے الزام پر چراغ پا بی ایس پی مایاوتی پر جوابی وار کرتے ہوئے اپنے بیان میں کہاکہ مایاوتی یو پی کے رائے دہندوں کو بیوقوف بنانے کی کوشش کررہی ہیں اور انتخابی فوائد کیلئے دلتوں پر مظالم کے مسائل اٹھارہی ہیں ۔ حالانکہ یو پی کے عوام جانتے ہیں کہ حکومت پر جب بھی بی ایس پی کا قبضہ رہا دلتوں پر مظالم میں اضافہ ہوگیا۔2008 اور 2011ء کے رپورٹس سے معلوم ہوتاہے کہ دلتوں پر مظالم کے 30ہزار مقدمے درج کئے گئے اور 1074دلت مایاوتی کے دوراقتدار میں ہلاک کردیئے گئے ۔

TOPPOPULARRECENT