Saturday , September 22 2018
Home / سیاسیات / مودی حکومت کالے دھن کو فروغ دے رہی ہے: کانگریس

مودی حکومت کالے دھن کو فروغ دے رہی ہے: کانگریس

نئی دہلی 20 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) پارلیمنٹ کے سرمائی اجلاس سے قبل کالا دھن مسئلہ پر تنقید میں اضافہ کرتے ہوئے کانگریس نے آج این ڈی اے حکومت پر الزام عائد کیاکہ وہ غیرقانونی دولت جو بیرون ملک جمع ہے، وطن واپس لانے کے اپنے تیقن کی تکمیل میں قاصر رہی ہے۔ کانگریس نے حکومت کے حالیہ فیصلہ پر بھی اعتراض کیا جس کے تحت سیونگ سرٹیفکیٹس اسکیم ک

نئی دہلی 20 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) پارلیمنٹ کے سرمائی اجلاس سے قبل کالا دھن مسئلہ پر تنقید میں اضافہ کرتے ہوئے کانگریس نے آج این ڈی اے حکومت پر الزام عائد کیاکہ وہ غیرقانونی دولت جو بیرون ملک جمع ہے، وطن واپس لانے کے اپنے تیقن کی تکمیل میں قاصر رہی ہے۔ کانگریس نے حکومت کے حالیہ فیصلہ پر بھی اعتراض کیا جس کے تحت سیونگ سرٹیفکیٹس اسکیم کے دوبارہ آغاز کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ جنرل سکریٹری کل ہند کانگریس اجئے ماکن نے کہاکہ حکومت مختلف وعدے کرتے ہوئے برسر اقتدار آئی تھی۔ کالے دھن کو وطن واپس لانے کا بھی تیقن دیا گیا تھا لیکن انتہائی افسوسناک بات ہے کہ حکومت جس نے کالے دھن کے بارے میں بہت کچھ کہا تھا، اب خود کالے دھن کو فروغ دے رہی ہے۔ ملک میں بچت کو فروغ دینے کے مقصد سے حکومت نے کسان وکاس پتر دوبارہ متعارف کروانے کا فیصلہ کیا ہے۔ اِس کا مقصد غریبوں کو بااعتماد سرمایہ کاری کا متبادل راستہ تھا تاکہ اُنھیں کونزی جیسے اسکامس سے بچایا جاسکے لیکن نئی حکومت کالے دھن کو فروغ دینے کے لئے اِس اسکیم کو استعمال کررہی ہے۔ امکان ہے کہ اِس سرٹیفکٹ کے ذریعہ غیرقانونی رقومات کی منتقلی اور دہشت گردی کو مالیہ کی فراہمی کا آغاز ہوجائے گا۔ انھیں اندیشوں کے تحت اِس اسکیم سے دستبرداری اختیار کی گئی تھی کہ اِس سے کالے دھن کو فروغ حاصل ہوگا۔

TOPPOPULARRECENT